”آج کل جہاں کہیں بھی نواز لکھا نظر آتا ہے لوگ خود ہی آگے پیچھے ”گو“ لکھ دیتے ہیں“، شیخ رشید کے ٹویٹ پر سوشل میڈیا پر ہنگامہ کھڑا ہو گیا

”آج کل جہاں کہیں بھی نواز لکھا نظر آتا ہے لوگ خود ہی آگے پیچھے ”گو“ لکھ دیتے ...
”آج کل جہاں کہیں بھی نواز لکھا نظر آتا ہے لوگ خود ہی آگے پیچھے ”گو“ لکھ دیتے ہیں“، شیخ رشید کے ٹویٹ پر سوشل میڈیا پر ہنگامہ کھڑا ہو گیا

  

راولپنڈی(ڈیلی پاکستان آن لائن )عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کی جانب سے جلسے جلوسوں کےساتھ ساتھ سوشل میڈیا پر بھی وزیر اعظم نوازشریف کے خلاف مہم کا سلسلہ جاری ہے جس کے بعددونوں جماعتوں کے حامیوں کے درمیان شدید لفظی جنگ شروع ہو چکی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق لیگی قیادت کے سخت ترین سیاسی مخالف شیخ رشید نے اپنے ٹویٹ میں کہا ہے کہ ”آج کل جہاں کہیں بھی نواز لکھنا نظر آتا ہے لوگ خود ہی آگے پیچھے ”گو “لکھ دیتے ہیں ۔شیخ رشید کے اس طنزیہ ٹویٹ کے بعد سوشل میڈیا پر دونوں رہنماﺅں کے حامیوں میں لفظی جنگ کا آغاز ہو چکا ہے ۔

محمد یحییٰ نامی شہری نے اپنے ٹویٹ میں لکھا ہے کہ آج کل جہاں کہیں شیخ رشید لکھا نظر آتا ہے لوگ خود ہی آگے پیچھے ”شیطان “ لکھ دیتے ہیں ۔

نوازشریف کے ایک سپاہی نے شیخ رشید کے ٹویٹ پر ردعمل دیتے ہوئے لکھا ہے کہ” انصافی قوم بھی یاجوج ماجوج کی طرح ہیں ،سارا دن گو نواز گو کرتے ہیں جب سو کر اٹھتے ہیں تو وزیراعظم پھر نواز شریف ہوتا ہے“۔

دانش حسین نے بھی اس لفظی جنگ میں حصہ لیتے ہوئے کہا ہے کہ ”اور جہاں لوٹا لکھا نظر آتا ہے وہاں لوگ شیدا ٹلی لکھ دیتے ہیں “۔

دیا نامی صارفہ نے اپنے ٹویٹ میں شیخ رشید کو انکل کہتے ہوئے لکھا ہے کہ ”انکل کی بیوٹی فل بات“۔

حسن شاہ ہاشمی نے نوازشریف اور شیخ رشید کی ایک ماضی کی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا ہے کہ اس جیسے بندے سے کوئی وفا کی توقع رکھے وہ سو فیصد پاگل ہے ۔

تصویر میں نوازشریف اپنے ہاتھوں سے شیخ رشید کو مٹھائی کھلا رہے ہیں ۔ اس نے عمران خان اور شیخ رشید کے مباحثے کو بھی شیئر کیا جس میں عمران خان شیخ رشید کو سخت تنقید کا نشانہ بنانے کے بعد کہتے ہیں کہ وہ شیخ رشید جیسے کو اپنا چپڑاسی بھی نہ رکھیں ۔

اگلی پوسٹ میں ایک خاکہ انگلی پکڑے رواں دواں ہے جس میں عمران خان اور شیخ رشید کی منظر کشی کی گئی ہے۔

ایک ٹویٹ میں کہا گیا ہے کہ جہاں جھوٹ لکھا ہو شیخ رشید کا نام آگے لکھیں یا پیچھے بات ایک ہی ہے ۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -