ڈان لیکس ملکی تاریخ کا سب سے بڑا سکینڈل ہے جو وزیراعظم ہاﺅس میں بنا، تحقیقاتی کمیٹی کی رپورٹ مسترد کرتے ہیں: خورشید شاہ

ڈان لیکس ملکی تاریخ کا سب سے بڑا سکینڈل ہے جو وزیراعظم ہاﺅس میں بنا، ...
ڈان لیکس ملکی تاریخ کا سب سے بڑا سکینڈل ہے جو وزیراعظم ہاﺅس میں بنا، تحقیقاتی کمیٹی کی رپورٹ مسترد کرتے ہیں: خورشید شاہ

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنماءاور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے ڈان لیکس پر تحقیقاتی کمیٹی کی رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈان لیکس کا سکینڈل وزیراعظم ہاو¿س میں بنا اور یہ پاکستان کی تاریخ کا بڑا سکینڈل ہے۔

ڈان لیکس انکوائری رپورٹ کا نوٹیفکیشن مسترد، نوٹیفکیشن انکوائری بورڈ کی سفارشات کے مطابق نہیں: ڈی جی آئی ایس پی آر

تفصیلات کے مطابق انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے حکومت کی جانب سے بنائی جانی والی تحقیقاتی کمیٹی کی رپورٹ کو پیپلز پارٹی مسترد کرتی ہے۔پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنماءقمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ ڈان لیکس کی رپورٹ متفقہ ہوتی تو آئی ایس پی آر کا ردعمل نہ آتا، حکومت کو ہوش کے ناخن لینے چاہئیں۔ ڈی جی آئی ایس پی آر کی جانب سے ڈان لیکس کی رپورٹ مسترد ہونے کے بعد ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے قمر زمان کائرہ نے کہا کہ اگر یہ متفقہ رپورٹ ہوتی تو آئی ایس پی آر کا ردعمل نہ آتا، حکومت کو ہوش کے ناخن لینے چاہئیں کیونکہ اس کی پہلے ہی پانامہ سے جان نہیں چھوٹ رہی۔

وزیراعظم نے ڈان لیکس رپورٹ کی سفارشات منظور کر لیں، طارق فاطمی عہدے سے فارغ، راﺅ تحسین کیخلاف محکمانہ کارروائی کا حکم

انہوں نے کہا کہ حکومت نے کسی کو بچانے کی کوشش میں یہ اقدام اٹھایا ہے اور کوئی بھی ذی شعور ان فائنڈنگز کو نہیں مانے گا۔ قمر زمان کائرہ نے کہا فوج کو بدنام کرنے اور بغاوت کے معاملے کے اصل کردار کون ہیں سب کو پتا ہے اور سرکاری حکام کو قربانی کا بکرا بنا کر اصل لاڈلوں کو بچا لیا گیا ہے۔ ڈان لیکس ہو کہ پاناما گیٹ اور اصغر خان کیس نواز شریف مجرم ثابت ہو کر بھی بری ہوئے۔ رپورٹ اب سامنے آئی ہے پیپلز پارٹی جلد اجلاس میں اپنی حکمت عملی وضح کرے گی۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -