ریسیپشنسٹ کی نوکری چھوڑنے والی خاتون انٹرنیٹ سے لاکھوں روپے کمانے لگی

ریسیپشنسٹ کی نوکری چھوڑنے والی خاتون انٹرنیٹ سے لاکھوں روپے کمانے لگی
ریسیپشنسٹ کی نوکری چھوڑنے والی خاتون انٹرنیٹ سے لاکھوں روپے کمانے لگی

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک خاتون نے اپنی دوست کے ساتھ آدھے پاﺅنڈ کی ایک شرط لگائی اور اس شرط نے اسے انٹرنیٹ پر اس قدر مشہور کر دیا کہ اب وہ اپنی ریسیپشنسٹ کی نوکری چھوڑ کر انٹرنیٹ سے ہی لاکھوں روپے کما رہی ہے۔ دی مرر کے مطابق مانچسٹر کی رہائشی یہ 45سالہ خاتون انتونیلا برولینی ہے۔ جس نے چند سال قبل ایک لپ اسٹک خریدی اور اپنی دوست کے ساتھ شرط لگائی کہ وہ دونوں اس لپ اسٹک پر ویڈیو کی شکل میں ’ری ویو‘(چیز کے معیار پر تبصرہ)بناتی ہیں اور جس کا ری ویو (Review)اچھا ہوا، اسے دوسری آدھا پاﺅنڈ ادا کرے گی۔

دونوں نے جب اپنے اپنے ریویوز بنا کر اپنے سوشل میڈیا اکاﺅنٹس پر ڈالے تو انتونیلا کا ری ویواتنا بہترین، ایماندارانہ اور مزے دار تھا کہ وہ سوشل میڈیا پر وائرل ہو گیا۔ تب سے انتونیلا نے اسی کام کو اپنا پیشہ بنا لیا۔ اب وہ مختلف مصنوعات پر اپنا ری ویو ریکارڈ کرتی اور اسے سوشل میڈیا پر پوسٹ کر دیتی ہے، جہاں اس کے ری ویوز کو کروڑوں لوگ دیکھتے ہیں اور وہ پیسے کماتی ہے۔ انتونیلا اب اتنی شہرت پا چکی ہے کہ فیس بک پر اسے 13لاکھ، انسٹاگرام پر 1لاکھ 63ہزار اور ٹوئٹر پر ساڑھے 7لاکھ لوگوں نے فالو کر رکھا ہے۔ یوٹیوب پر بھی اس کے چینل کو 76ہزار لوگ سبسکرائب کر چکے ہیں۔ انتونیلاکا کہنا تھا کہ ”میں چیزوں پر انتہائی ایماندارانہ تبصرہ کرتی ہوں اور اس کو مزاح کا بھی تڑکا لگاتی ہوں۔ میں نہیں جانتی تھی کہ میری دوست کے ساتھ لگائی گئی آدھے پاﺅنڈ کی شرط مجھے لکھ پتی بنا دے گی۔ مزے کی بات یہ ہے کہ میری اس دوست نے وہ شرط کا آدھا پاﺅنڈ ابھی تک مجھے ادا نہیں کیا۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ