'کورونا سے جڑی' ایک نئی بیماری بچوں کی ہلاکت کا سبب بننے لگی؟ انتہائی پریشان کن خبر

'کورونا سے جڑی' ایک نئی بیماری بچوں کی ہلاکت کا سبب بننے لگی؟ انتہائی پریشان ...
'کورونا سے جڑی' ایک نئی بیماری بچوں کی ہلاکت کا سبب بننے لگی؟ انتہائی پریشان کن خبر

  

لندن(ڈیلی پاکستان آن لائن)کورونا سے تعلق برطانیہ میں کم سن بچے ایک نایاب بیماری میں مبتلا ہوکر ہلاک ہونے لگے۔ برطانوی میڈیا کے مطابق برطانیہ میں کورونا وائرس کی وجہ سے نئی پریشانی کا سامناہورہاہے۔سیکرٹری ہیلتھ میٹ ہینکاک کا کہنا ہے کہ صحت مند بچے جن کو صحت کے مسائل کا سامنا نہیں تھاوہ ایک نایاب انفلیمیٹری سینڈروم کا شکار ہو کر ہلاک ہو رہے ہیں۔سائنسدانوں کے مطابق ان ہلاکتوں کا تعلق کورونا وائرس سے ہونے والی بیماری کووڈ19 سے ہو سکتا ہے

کورونا وائرس کے دوران بچوں میں ایک اوربیماری  نے ماہرین صحت کو پریشان کردیا۔۔ اس بیماری میں  چند بچے تیز بخار اور شریانوں کی سوجن کے ساتھ ہسپتال آئے اور انتقال کر گئے،،ماہرین اس انفلیمیٹری سینڈروم اورکوروناکےباہمی تعلق پرتحقیق کررہےہیں۔

برطانیہ اور امریکا سمیت دنیا کے مختلف ممالک سے تعلق رکھنے والے ذرائع ابلاغ اس نایاب بیماری سے متعلق اطلاعات لوگوں تک پہنچا رہے ہیں۔

سی این این کے مطابق کچھ بچے ایک ایسی بیماری میں مبتلا ہورہے ہیں جن کا تعلق کورونا وائرس سے جڑا ہوا ہوسکتا ہے۔ ی این این کے مطابق متاثرہ بچوں کی تعداد بڑھ رہی ہے۔

ڈاکٹرزکاکہناہے9سال سے کم عمر بچےکاوساکی نامی ایک بیماری سے متاثر ہورہے ہیں یہ بیماری عام طور پر ایشیائی خطے میں پائی جاتی ہے۔

سیکرٹری ہیلتھ میٹ ہینکاک کاکہناہے کہ کچھ ہلاک ہونے والے بچوں میں صحت کے کوئی مسائل نہیں تھے۔یہ ایک نئی بیماری جو شاید کورونا وائرس کی وجہ سے سامنے آ رہی ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم سو فیصد یقین سے نہیں کہہ سکتے کیونکہ کچھ بچے جنہیں یہ سینڈروم ہوا ان میں کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت نہیں تھا۔

کاواساکی کی بیماری کی وجوہات نامعلوم ہیں اور یہ کم عمر بچوں کومتاثر رتی ہے۔ اس کی علامات میں بخار، جلد کی خرابی، سوجن اور شدید کیسزمیں دل کی شریانوں میں سوجن شامل ہے

مزید :

برطانیہ -کورونا وائرس -