بینک الفلاح کا بعد از ٹیکس منافع 2.821 ارب روپے رہا

    بینک الفلاح کا بعد از ٹیکس منافع 2.821 ارب روپے رہا

  

کراچی (خصوصی رپورٹ)بینک الفلاح کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کی 26 اپریل، 2020کو ہونے والی میٹنگ میں 31 مارچ،2020 کو ختم ہونے والی سہ ماہی کے غیر آڈٹ شدہ عبوری مالیاتی نتائج کی منظوری دی گئی۔ بینک کا قبل از ٹیکس منافع اور بعد از ٹیکس منافع بالترتیب 4.757 ارب روپے اور 2.821 ارب روپے رہا جس کے باعث بینک کی فی شیئر آمدنی 1.59 روپے فی شیئر رہی۔ (مارچ 2019:1.76 روپے)۔2020 کی پہلی سہ ماہی کے منافع میں گذشتہ سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 9.6 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی۔ یہ کمی کریڈٹ پورٹ فولیو اور سرمایہ کاری میں ہونے والی کمی کی وجہ ہوئی ہے۔ کریڈٹ کے تناظر میں کچھ قرضوں کی سطح کم کردی گئی جبکہ اسٹیٹ بینک کی طرف سے فراہم کی گئی چارجز کو ملتوی کرنے کی سہولت سے فائدہ اُٹھانے کے بجائے ایکویٹی بک میں مکمل impairment چارچز لئے گئے ہیں۔آمدنی کے شعبے میں خالص سودی اور بلا سود ی آمدنی میں مجموعی طور پر 7.7 فیصد اضافہ ہوا۔ یہ اضافہ غیر ملکی زر مباد لہ کی نمایاں 1.056 ارب روپے آمدنی کی وجہ سے ہوا۔ گذشتہ سال خالص سودی آمدنی میں نان پرفارمنگ قرضوں کا معطل سودبھی شامل تھا۔ غیر سودی آمدنی پر کورونا وائرس کے باعث اسٹا ک مارکیٹ پر پڑنے والے منفی اثرات کی وجہ سے بھی کمی ہوئی ہے۔ غیر سودی اخراجات میں گذشتہ سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 19.4 فیصد اضافہ ہوا۔ انفارمیشن ٹیکنالوجی، ڈیجیٹل چینلز، ریگولیٹر کے احکامات کی تکمیل، گذشتہ سال کھولی جانے والی 49 نئی برانچوں کے اخراجات، انفلیشن اور روپے کی قدر میں کمی اخراجات میں اضافے کی وجوہات تھیں۔ مجموعی ڈپازٹ اس وقت 755.135 ارب روپے ہے جو دسمبر 2019 سے کم ہیں۔ یہ کمی پہلی سہ ماہی میں روایتی طور پر ہوتی ہے۔ بینک کے مجموعی ایڈوانسز 520.436 ارب روپے ہیں۔ سہ ماہی کے اختتام پر ہمارے مجموعی ایڈوانس کے مقابلے میں ڈپازٹ کی شرح 68.9 فیصد ہے جبکہ CASA کی شرح 80.6فیصد ہے جو صنعت میں بلند ترین شرح ہے۔ بینک کے نان پرفارمنگ ایڈوانسز 23.502 ارب روپے ہیں اور نان پرفارمنگ لونز کی شرح 4.5 فیصد ہے اور یہ صنعت میں کم ترین شرح ہے۔ بینک کے سرمایہ کاری ریکارڈ میں حکو متی سیکیور ٹیز سے ہونے والا منافع بھی موجود ہے جو آنے والی سہ ماہی میں بینک کے منافع میں اضافے کا باعث بن سکتا ہے۔ مارچ 2020 میں ہونے والی سالانہ جنرل میٹنگ میں حصص یافتگان کیلئے ڈیوڈینڈ کی منظوری کے باوجود بینک کے حصص یافتگان کی ایکویٹی میں معمولی سی بہتری آئی ہے۔ پہلی سہ ماہی کے اختتام پر بینک کے پاس مناسب سرمایہ موجود ہے اور CAR 17.25 فیصد ہے۔

بینک الفلاح

مزید :

صفحہ آخر -