سندھ حکومت کا منافع اور ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کریک ڈاؤن

  سندھ حکومت کا منافع اور ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کریک ڈاؤن

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ حکومت نے لاک ڈاؤن اور ماہ رمضان میں منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کریک ڈاؤن کرتے ہوئے صوبے بھر میں 792 منافع خوروں او رذخیرہ اندوزوں کا چالان کیا گیا۔اشیائے خردونوش مہنگی فروخت کرنے والوں پر 16 لاکھ 42 ہزار4 سو روپے جرمانہ عائد کیا گیا۔وزیر زراعت سندھ اسماعیل راہو نے کہا کہ کراچی میں 195 منافع خوروں کو چالان کیا گیا اور ان پر 12 لاکھ 85 ہزار روپے جرمانہ کیا گیا،کارروائیاں سکھر،بدین،کشمور،شکارپور،تھرپارکر، میرپورخاص،ٹھٹھہ اور دیگراضلاع میں کی گئیں۔کاررو ائی سبزی،پھل،گوشت،مرغی،کریانہ اور دیگر دکانداروں کے خلاف کی گئیِں۔اسماعیل راہو نے کہا کہ سندھ حکومت کا فیصلہ ہے کہ ماہ رمضان کی آڑمیں ناجا ئز منافع کمانے نہیں دیا جائیگا۔منافع خوروں کو گرفتار کیا جا ئیگااوربھاری جرمانہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ جوبھی ماہ رمضان میں منافع خوری کرے گا اسکے خلاف بلاتفریق کارروائی ہوگی۔حکومت کی رٹ کو چیلنج نہیں کرنے دیا جائے گا۔سرکاری نرخ سے زائد فروخت کرنے پر ایکشن ہوگا۔

مزید :

صفحہ آخر -