نقائص کی شکایات، بھارت نے چینی کورونا ٹیسٹ کِٹس کا آرڈر منسوخ کردیا

    نقائص کی شکایات، بھارت نے چینی کورونا ٹیسٹ کِٹس کا آرڈر منسوخ کردیا

  

دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت نے کورونا وائرس کی فوری تشخیص کرنے والی چینی کِٹس میں نقائص سامنے آنے کے بعد اس کا بڑا آرڈر منسوخ کردیا۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق بھارت کی جانب سے کورونا کی فوری تشخیص کی 5 لاکھ کِٹس منگوائی گئی تھیں تاہم اب یہ آرڈر منسوخ کردیا گیا ہے۔رپورٹ کے مطابق بھارتی حکومت نے مختلف ریاستوں کے اسپتالوں اور لیبارٹریوں میں پہلے سے موجود ایسی کِٹس بھی واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے۔نئی دہلی میں چینی سفارت خانے کے ترجمان کا کہناہے چین سے برآمد کیے جانے والے طبی آلات اور سامان کے معیار کو خاص اہمیت دی جاتی ہے اور چینی مصنوعات کو ناقص اور خراب کہنا انصاف کے تقاضوں کے خلاف اور غیر ذمہ دارانہ ہے جس سے تعصب بھی ظاہر ہوتا ہے۔ متعدد بھارتی ریاستوں نے انڈین میڈیکل ریسرچ کونسل (آئی ایم آر سی) پر زور دیا تھا کہ انہیں یہ کٹس استعمال کرنے دی جائیں کیونکہ بھارت میں پہلے ہی کورونا ٹیسٹ ضرورت سے نہایت کم ہیں، جس کے بعد آئی ایم آر سی نے دو چینی کمپنیوں سے یہ کٹس منگوانے کی اجازت دی تھی۔تاہم بہت سی ریاستوں سے کِٹس کے حوالے سے شکایات سامنے آئی ہیں کہ ان سے نتئج ٹھیک نہیں آرہے اور صرف5 فیصد ٹیسٹ کے نتائج ہی درست آ رہے ہیں جب کہ ایسے مریض جن کا ٹیسٹ مثبت تھا وہ بھی ان کِٹس کے ذریعے کیے گئے ٹیسٹ میں کلیئر قرار دیے گئے۔

آرڈر منسوخ

مزید :

صفحہ اول -