خواجہ فرید ادبی سنگت کے چیئرمین، شاعربشیر دیوانہ صادق آبادمیں انتقال کرگئے نمازجنازہ ادا،کل صبح8بجے قل خوانی

  خواجہ فرید ادبی سنگت کے چیئرمین، شاعربشیر دیوانہ صادق آبادمیں انتقال ...

  

ملتان (سٹی رپورٹر)ملتان خواجہ فرید ادبی سنگت کے چیئرمین اور سرائیکی میگزین گامن سچار کے ایڈیٹر بشیر دیوانہ صادق آباد میں انتقال کر گئے۔ نماز جنازہ میں شاعروں، ادیبوں اور دانشوروں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔(بقیہ نمبر22صفحہ6پر)

مرحوم کی روح کو ایصال ثواب کیلئے قل خوانی مورخہ 30اپریل2020ء بروز جمعرات 8 بجے صبح مرحوم کی رہائش گاہ صادق آباد میں ہو گی۔ سوگواران میں 7 بیٹے ذیشان بشیر، مہران بشیر، عدنان بشیر، سلمان بشیر، کامران بشیر، عرفان بشیر اور عمران بشیر کے علاوہ 2 بیٹیاں شامل ہیں۔ مرحوم بشیر دیوانہ صادق آبادی 1965ء میں فقیر بخش ولیانی کے گھر پیدا ہوئے، مڈل تک تعلیم حاصل کی، 1980ء میں شاعری کا آغاز کیا، شاعری میں ان کے استاد مرحوم عبدالخالق مستانہ تھے، 12 کتابیں شائع ہوئیں جن میں سوچیں دا سفر، جشن میلاد، ماں دا پیار، چمکدے تارے، سوہنا ساوا روزہ، کسانیں دے گاون، شہادت بینظیر، میڈا عشق وی توں، سرائیکی ڈوہڑے، دعائے خورشید، بٹ کڑاک وغیرہ شامل ہیں۔ اس کے علاوہ اُن کی بہت ساری کتابیں مرتب شدہ بھی ہیں۔ شاعری کے ساتھ ساتھ آپ صحافت سے بھی وابستہ رہے، بعدازاں انہوں نے اپنا میگزین گامن سچار کے نام سے بھی شائع کیا جس کے شمارے سرائیکی صحافت کا بہترین حوالہ ہیں۔ بشیر دیوانہ کی وفات پر سرائیکستان صوبہ محاذ کے چیئرمین خواجہ غلام فرید کوریجہ، ظہور دھریجہ، پروفیسر شوکت مغل، مہر حسین خان دھریجہ، طارق خان جتوئی ایڈووکیٹ، نور تھہیم ایڈووکیٹ و دیگر نے اظہار تعزیت کرتے ہوئے مرحوم کی مغفرت کیلئے دعا کی ہے۔ سرائیکی تھنکر فورم کے صدر مسیح اللہ خان جام پوری نے کہا کہ اچھے ادیب، شاعر و صحافی ہونے کے ساتھ ساتھ بشیر دیوانہ بہت اچھے انسان بھی تھے۔ انہوں نے پوری زندگی وسیب کی خدمت میں گزار دی۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کے مشیر اطلاعات جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ سے اپیل ہے کہ وہ مرحوم کے بیٹوں کی کفالت کریں کہ مرحوم کی نہ صرف صادق آباد بلکہ ملک و قوم کیلئے بہت خدمات ہیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -