لڈن احساس میں کفالت سنٹر بند، مستحقین کاانتظامیہ کیخلاف مظاہرہ

  لڈن احساس میں کفالت سنٹر بند، مستحقین کاانتظامیہ کیخلاف مظاہرہ

  

وہاڑی، لڈن، ڈہرکی (بیورورپورٹ،سٹی رپورٹر، نمائندہ پاکستان)وزیر اعظم پاکستان احساس کفالت پروگرام کی امدادی رقم کی تقسیم کیلئے نواحی علاقہ لڈن میں قائم کیا گیا سنٹر بند کر دیا گیا ہے وزیر اعظم پاکستان احساس کفالت پروگرام کی امدادی رقم کی تقسیم کیلئے نواحی علاقہ(بقیہ نمبر16صفحہ6پر)

لڈن میں بنایا جانیوالا سنٹر بند کر دیا گیا ہے سنٹرز پر مردوخواتین کا رش بڑھ گیاہے، روزہ دار مرد وخواتین سراپا احتجاج سنٹر بند کرنے پر سینکڑوں مستحق مردوخواتین نے ضلعی انتظامیہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ شروع کردیا اور شدید نعرہ بازی کی مظاہرین کا کہناتھا کہ امدادی رقم کے نام پر دھکے دئیے جارہے ہیں اور زوزہ دار مردوخواتین کو ذلیل کیاجارہاہے ٹریفک بند ہے اور لاک ڈاؤن کے باعث آنا جانا دشوار ہے ہم دوسرے سنٹرز پر کس طرح جائیں حکومت ہمارے ساتھ ہونیوالی زیادتی کا فوری نوٹس لے اس حوالہ سے اسسٹنٹ کمشنر احمد نوید بلوچ نے موقف اختیار کرتے ہوئے کہاکہ لڈن سنٹر پرمستحق افراد کی تعداد کم ہوجانے پر سنٹر ختم کیاگیاہے اب حکومت کی طرف سے بھیجی گئی نئی لسٹ کے مطابق سنٹر کھولا جائے گا جبکہ مستحقین ڈگری کالج سے اپنی رقوم وصول کر سکتے ہیں۔ڈہرکی(نامہ نگار)ڈہرکی عظیم کالونی کے رہاؤشیوں نے سرکاری راشن اور بنیادی سہولیات نہ ملنے پر منتخب نمائندوں ضلعی اور مقامی انتظامیہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا اور نعرے بازی کرتے ہوئے لالہ شہزاد۔ عبدالمجید۔ محمد حسن اور دیگر معصوم بچوں سمیت درجنوں علاقہ مکیوں نے وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ۔ کمشنر سکھر اور دیگر متعلقہ افسران بالا سے ہاتھوں میں ہلے کارڈ ز جن پر مندرجہ ذیل گزارشات کرتے ہوئے کہا ہے کہ کیا ہماراآخر جرم کیا ہے؟ کیا ہم عظیم کالونی میں انسان نہیں رہتے؟ کیا عظیم والوں کے بچوں کوبھوک نہیں لگتی؟ کیا عظیم کالونی والوں کوراشن دینے پر عالمی پابندی لگا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -