کورونا سے ایک ہی روز 29ریکارڈ ہلاکتیں، چوبیس گھنٹوں میں 710نئے کیس رپورٹ، مجموعی اموات 329ہو گئیں

کورونا سے ایک ہی روز 29ریکارڈ ہلاکتیں، چوبیس گھنٹوں میں 710نئے کیس رپورٹ، ...

  

 اسلام آباد، لاہور، کراچی، پشاور، کوئٹہ،(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)ملک میں کورونا وائرس سے مزید 29 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 329 ہو گئی جب کہ نئے کیسز سامنے آنے سے مصدقہ مریضوں کی تعداد 14742 تک جا پہنچی ہے۔اب تک سب سے زیادہ اموات خیبرپختونخوا میں سامنے آئی ہیں جہاں کورونا سے 114 افراد انتقال کر چکے ہیں جب کہ سندھ میں 92 اور پنجاب میں 95 افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔اس کے علاوہ بلوچستان میں 14، اسلام آباد 4 اور گلگت بلتستان میں 3 افراد مہلک وائرس کے باعث جاں بحق ہو چکے ہیں۔ منگل کے روز پنجاب میں 210 کیسز11 ہلاکتیں، سندھ 335 کیسز 7 ہلاکتیں، خیبر پختونخوا میں 176 کیسز 10 ہلاکتیں، اسلام آباد 16 کیسز ایک ہلاکت، بلوچستان ایک ہلاکت، گلگت بلتستان میں 10 کیسز اور آزاد کشمیر سے 6 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔صو بہ سندھ میں کورونا کے مزید 335 کیسز رپورٹ ہوئے اور 7 ہلاکتیں بھی ہوئی ہیں۔وزیراعلیٰ سندھ نے کیسز اور ہلاکتوں کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ صوبے میں نئے کیسز کے بعد کورونا میں مبتلا مریضوں کی تعداد 5291 ہوگئی ہے جب کہ اب تک 92 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔صوبائی حکومت کے ترجمان مرتضیٰ وہاب نے بتایا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں مزید 38 مریض صحتیاب ہوکر اپنے گھروں کو چلے گئے جس کے بعد صوبے میں صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 963 ہوگئی ہے۔ادھر پنجاب میں بھی کورونا وائرس کے مزید 204 کیسز اور 11 اموات سامنے آگئیں۔ترجمان پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر کا کہنا تھا کہ صوبے میں نئے کیسز کے بعد تعداد 5730 ہوگئی ہے۔ان کیسز کی تفصیلات کے بارے میں انہوں نے بتایا کہ 768 زائرین سینٹرز، 1925 رائے ونڈ سے منسلک افراد، 86 قیدی اور 2951 عام شہری ہیں۔ترجمان کے مطابق کورونا وائرس سے مزید 11 اموات سے مجموعی تعداد 95 ہوگئی ہیں۔ساتھ ہی ان کا کہنا تھا کہ 1380 افراد صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 22 مریض تشویشناک حالت میں ہیں۔وفاقی دارالحکومت میں کورونا وائرس کے مزید 16 کیسز سامنے آئے ہیں اور ایک ہلاکت بھی ہوئی ہے جس کی تصدیق سرکاری پورٹل پر کی گئی ہے۔نئے کیسز سامنے آنے کے بعد اسلام آباد میں کیسز کی مجموعی تعداد 261 اور ہلاکتیں 4 ہوگئی ہیں۔بلوچستان میں کورونا سے مزید ایک ہلاکت سامنے آئی ہے جس کی تصدیق صوبائی محکمہ صحت کی جانب سے کی گئی ہے۔محکمہ صحت کیمطابق صوبے میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 14 ہوگئی ہے۔صوبائی حکومت کے ترجمان لیاقت شاہوانی کے مطابق بلوچستان میں پیر کو کورونا کے مزید 72 مریض سامنے آئے جس کے بعد وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 853 ہوگئی۔صوبائی محکمہ صحت کے مطابق بلوچستان میں اب تک کورونا کے 177 مریض صحت یاب ہو چکے ہیں۔آزاد کشمیر سے بروز منگل کورونا کے مزید 6 کیسز سامنے آئے ہیں جو سرکاری پورٹل پر رپورٹ کیے گئے ہیں۔خیبر پختونخوا میں منگل کو کورونا وائرس کے 176 نئے کیسز اور10 اموات بھی سامنے آئیں جس کے بعد صوبے میں کورونا مریضوں میں مجوعی تعداد 2160 اور ہلاکتیں 114 ہوگئیں۔صوبائی وزارت صحت کے مطابق پشاور میں 7، مردان میں دو اور ایبٹ آباد میں ایک شخص کورونا سے جاں بحق ہوا۔ خیبرپختونخوا میں اب تک 562 افراد کورونا وائرس سے صحت یاب ہوچکے ہیں۔گلگت بلتستان میں منگل کو مزید 10 نئے کیسز کی تصدیق ہوئی جس کے بعد متاثرہ افراد کی تعداد 330 ہوگئی ہے۔

کرونا ہلاکتیں

لندن، ماسکو، واشنگٹن (مانیترنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)دنیا کے مختلف ممالک میں جہاں کورونا وائرس کے کیسز میں نمایاں کمی آرہی ہے وہیں روس میں مریضوں کی تعداد میں اچانک اضافہ دیکھا گیا ہے۔روس کی سرکاری نیوز ایجنسی کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 6 ہزار411 کیسز سامنے آئے ہیں جس کے بعد مریضوں کی تعداد 93 ہزار 558 ہوگئی ہے جب کہ ہلاکتوں کی کل تعداد 73 ہوچکی ہے۔امریکی جونز ہاپکنز یونیورسٹی کے نئے اعداد و شمار کے مطابق روس نے کورونا کے کیسز میں ایران اور چین کو بھی پیچھے چھوڑ دیا ہے اور اس طرح وہ پوری دنیا میں نویں نمبر پر متاثر ہونے والا ملک بن گیا ہے۔برازیل میں بھی کورونا کی تباہ کاریوں میں تیزی سے اضافہ دیکھا گیا ہے جہاں ایک ہی دن میں ہزار کے قریب کیسز سامنے آئے ہیں جس کے بعد متاثرین کی کل تعداد 67 ہزار 446 تک پہنچ گئی ہے جب کہ مزید 60 مریض ہلاک ہونے کے بعد اموات کی مجموعی تعداد 4 ہزار 603 ہوگئی ہے۔میکسیکو میں بھی مہلک کورونا کے 852 نئے کیسز سامنے آئے ہیں جہاں اب مجموعی تعداد 15 ہزار 529 ہوگئی ہے جب کہ مزید 83 ہلاکتوں کے بعد 1 ہزار 434 افراد لقمہ اجل بن گئے ہیں۔ جونز ہاپکنز یونیورسٹی کے اعداد و شمار کے مطابق امریکا میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران اموات کی تعداد میں نمایاں کمی آئی ہے یعنی 50 سے اوپر اموات کا سلسلہ اب صرف 6 تک آگیا ہے۔امریکا میں کورونا سے اموات کی کل تعداد 56 ہزار 803 تک پہنچ گئی ہے جب کہ 150 نئے کیسز سامنے آنے کے بعد متاثرین کی کل تعداد 10 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے۔ گورنر نیویارک نے 15 مئی کے بعد لاک ڈاؤن میں نرمی کا عندیہ دیاہے اور ان کا کہنا ہے کہ نیو یارک شہر کو کھولنے کا فیصلہ نیو جرسی اورکنیٹی کٹ حکام سے مشاورت کے بعد کیا جائے گا۔دوسری جانب امریکی ریاست ہوائی نے لاک ڈاؤن میں 31 مئی تک توسیع کر دی ہے۔یورپ کے سب سے زیادہ متاثرہ ممالک اسپین، اٹلی اور فرانس میں ہلاکتیں اور نئے کیسز مسلسل سامنے آ رہے ہیں تاہم کیسز اور اموات کی تعداد میں بتدریج کمی واقع ہو رہی ہے۔اٹلی میں کورونا وائرس سے ہلاک افراد کی تعداد 26 ہزار 977 ہو گئی ہے جب کہ اسپین میں 23 ہزار 521 اور فرانس میں 22 ہزار 293 افراد جان سے جاچکے ہیں۔نیوزی لینڈ میں سخت لاک ڈاؤن کے باعث کورونا کیسز کی تعداد بتدریج کم ہورہی ہے اور 27 اپریل کو نیوزی لینڈ میں صرف ایک کیس رپورٹ ہوا ہے جس کے بعد نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن نے کورونا وائرس کے خلاف جنگ جیتنے کا دعویٰ کیا ہے۔نیوزی لینڈ میں مہلک وائرس سے اب تک 19 افراد ہلاک ہوئے ہیں جب کہ متاثرہ افراد کی تعداد 1469 ہے اور 1180 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔ناروے میں کورونا وائرس پر قابو پانے کے اعلان کے بعد اسکول کھول دیے گئے ہیں۔اوسلو میں 6 سے 10 سال کے بچوں کے لیے نرسری اسکولز ایک ہفتہ پہلے کھولے گئے تھے اور کھلنے والے اسکولز میں کلاسز کو کم سے کم 15 طلبہ تک محدود کردیا گیا ہے۔ناروے حکومت نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا مقابلہ کرنے کے لیے عائد پابندیاں 12 مارچ سے نرم کرنا شروع کر دی تھیں۔حکام کا کہنا ہے کہ کورونا پر قابو پانے کے باوجود کھولے جانے والے کاروبار میں بہت سی احتیاطی تدابیر اور اقدامات جاری رہیں گے جب کہ کھیلوں اور ثقافتی پروگراموں پر پابندی برقرار رہے گی۔دنیا بھر میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد تیس لاکھ پچاس ہزار کے قریب پہنچ گئی ہے جبکہ ہلاک ہونے والے مریضوں کی تعداد دو لاکھ گیارہ ہزار سے زائد ہو چکی ہے۔ مقبوضہ جموں و کشمیر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے 23 نئے مثبت کیسز سامنے آئے ہیں۔جن میں سے 22کا تعلق کشمیر صوبے اور ایک کا تعلق جموں صوبے سے ہیں اور اس طرح مثبت معاملات کی کل تعداد 546 تک پہنچ گئی ہے۔لداخ کے علاقے میں 20کیسز کے ساتھ کل تعداد 566بنتی ہے۔

عالمی ہلاکتیں

مزید :

صفحہ اول -