سندھ حکومت نے کورونا سے بچاؤ کیلئے سب سے پہلے احتیاطی اقدامات کئے: سعید غنی

  سندھ حکومت نے کورونا سے بچاؤ کیلئے سب سے پہلے احتیاطی اقدامات کئے: سعید غنی

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیر تعلیم و محنت سندھ سعید غنی نے کہا ہے کہ سندھ حکومت نے کرونا وائرس سے عوام کو بچانے کے لئے سب سے پہلے احتیاطی اقدامات شروع کئے تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو اس وبا سے محفوظ رکھا جاسکے، اب تک جن جن سیکٹرز کو کام کرنے کی اجازت دی گئی ہے، اس کے لیے نہ صرف سخت ایس او پیز بنائی گئی ہیں بلکہ اس کی جامع مانیٹرنگ بھی کی جارہی ہے، ہم ایسا کوئی رشک لینا نہیں چاہتے، جس سے اس وائرس کا پھیلاؤ ہو۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کے روز اپنے دفتر میں کراچی ٹرانسپورٹ اتحاد کے صدر ارشاد بخاری کی قیادت میں آنے والے انٹرا سٹی اورسندھ بس اونرز ایسوسی ایشن کے عہدیداران سے ملاقات کے دوران کیا۔ ملاقات میں حاجی امان اللہ خان نیازی، حاجی مراد خان درانی، حاجی عبدالرؤف خان نیازی، محمد عاشق، تواب خان، فقیر محمد اور دیگر شامل تھے۔ اس موقع پر صوبائی وزیر سعید غنی نے ٹرانسپورٹرز کے مسائل سنیں اور موجودہ صورتحال کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا.سعید غنی نے کہا کہ سندھ حکومت نے کرونا وائرس سے عوام کو بچانے کے لئے سب سے پہلے احتیاطی اقدامات شروع کئے تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو اس وبا سے محفوظ رکھا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ اوراب تک جن جن سیکٹرز کو کھولا گیا ہے اور انہیں کام کی اجازت دی گئی ہے اس کے لیے نہ صرف سخت ایس او پیز بنائی گئی ہیں بلکہ اس کی جامع مانیٹرنگ بھی کی جارہی ہے۔ سعید غنی نے کہا کہ ہم اس وقت ایسا کوئی رشک لینا نہیں چاہتے، جس سے اس وائرس کا پھیلاؤ ہو۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل اسٹاف اس وبا سے عوام کو بچانے کے لئے اپنی جان کی پرواہ نہ کرتے ہوئے کام کررہے ہیں اور انشاء اللہ ہم اس وبا کو آخر دم تک مقابلہ کرکے اس کو شکست دیں گے۔ اس موقع پر صدر کراچی ٹرانسپورٹ اتحاد ارشاد بخاری نے کہا کہ ہم حکومت کے تمام اقدامات کی حمایت کرتے ہیں۔آج ڈیڑھ ماہ سے زائد کا عرصہ گزر گیا ہے اور ہماری ٹرانسپورٹ ہم نے حکومت کے اعلان پر بند رکھی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ سندھ حکومت یہ سب عوام کے مفاد میں کررہی ہے لیکن اب ہمارے ڈرائیورز اور کلینئرز سڑکوں پر بے آسرا ہوکر پڑے ہیں۔ اس موقع پر حاجی امان اللہ خان نیازی، حاجی مراد خان درانی اور دیگر نے کہا کہ سندھ حکومت اندرون سندھ ٹرانسپورٹ چلانے کے لیے ایس او پیز بنا کر ہم دیں ہم اس پر مکمل عملدرآمد کی یقین دہانی کراتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اگر فوری طور پر ٹرانسپورٹ نہیں کھول سکتی تو ڈرائیوروں، کلئنرز اور مالکان کے لئے ریلیف پیکج کا اعلان کرے۔ ان رہنماؤں نے کہا کہ ہم پر اس وقت اپنے ٹرانسپورٹروں اور ہمارے پاس کام کرنے والے ملازمین کا بھاری دباؤ ہے، ہم سندھ حکومت کی نیت پر شک نہیں کرتے کیونکہ سندھ حکومت ہی واحد حکومت ہے جس نے سب سے پہلے کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے اقدامات کیے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہماری یہ استدعا ہے کہ ہمارے مسائل کو ترجیعی بنیادوں پر حل کیا جائے اور ایس او پیز دے کر انٹر سٹی اور اندرون سندھ ٹرانسپورٹ شروع کی جائے۔

مزید :

صفحہ اول -