صوبہ پنجاب میں آٹے اور چینی کے بعد اب ایک اور چیز کی قلت ہو گئی ، قیمتیں آسمان پر پہنچ گئیں

صوبہ پنجاب میں آٹے اور چینی کے بعد اب ایک اور چیز کی قلت ہو گئی ، قیمتیں آسمان ...
صوبہ پنجاب میں آٹے اور چینی کے بعد اب ایک اور چیز کی قلت ہو گئی ، قیمتیں آسمان پر پہنچ گئیں

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )صوبہ پنجاب میں آلو کی قلت پیدا ہونے سے قیمتوں میں ڈیڑھ سو فیصد اضافہ ہو گیا جب کہ قیمتوں میں ہوشربا اضافے پر پنجاب حکومت بھی متحرک ہو گئی ہے۔

نجی ٹی وی جیونیوز کی رپورٹ کے مطابق پنجاب حکومت نے صوبے بھر میں تعینات کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز کے نام جاری مراسلے میں آلو کی قیمتیں بڑھنے پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔مراسلے میں کہا گیا ہے کہ ماہ اپریل کے صرف 12 دنوں میں آلو کی قیمت فی کلو 36 روپے سے 60 روپے تک پہنچ گئی ہے۔رمضان المبارک کا آغاز ہوتے ہی پھلوں اور سبزیوں کی قیمتیں کنٹرول سے باہر ہوگئیں

مراسلے کے مطابق افغانستان اور مشرق وسطیٰ کو بڑی مقدار میں آلو ایکسپورٹ کیا گیا جس سے قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔مراسلے میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ پنجاب میں گزشتہ سال کی نسبت آلو کی کاشت 8.84 فیصد کم ہوئی تھی۔مراسلے میں کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ آلو کاشت کرنے والے کاشتکاروں سے رابطہ کر کے سپلائی اور قیمتوں میں توازن برقرار رکھنے کے لیے فوری اقدامات کیے جائیں۔

مزید :

قومی -