کورونا وائرس سے نجات کب ملے گی؟ چینی سائنسدانوں نے انتہائی پریشان کن پیشنگوئی کردی

کورونا وائرس سے نجات کب ملے گی؟ چینی سائنسدانوں نے انتہائی پریشان کن ...
کورونا وائرس سے نجات کب ملے گی؟ چینی سائنسدانوں نے انتہائی پریشان کن پیشنگوئی کردی

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس نے پوری دنیا میں لوگوں کا طرز زندگی یکسر بدل کر رکھ دیا ہے۔ ایک سوال جو ہر شخص پوچھتا پایا جا رہا ہے وہ یہ ہے کہ آخر اس بلا سے کب نجات ملے گی اور کب پہلے والی نارمل زندگی واپس لوٹے گی؟ اب چینی سائنسدانوں نے اس سوال کا ایسا جواب دے دیا ہے کہ سن کر ہر کوئی پریشان رہ جائے۔ میل آن لائن کے مطابق چینی تحقیق کاروں نے بتایا ہے کہ یہ قاتل وائرس دنیا سے ہمیشہ کے لیے کبھی ختم نہیں ہو گا بلکہ فلو کی طرح یہ بھی ایک موسمی وائرس بن جائے گا اور ہر سال دنیا میں کہیں نہ کہیں حملہ آور ہو گا۔

چائنیز اکیڈمی آف میڈیکل سائنسز کے ذیلی ادارے انسٹیٹیوٹ آف پیتھوجن بائیولوجی کے ڈائریکٹر جن شی نے دیگر ماہرین کے ہمراہ بیجنگ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ”کورونا وائرس ماضی قریب میں پھیلنے والے وائرس ’سارس‘ کی طرح ہمیشہ کے لیے ختم نہیں ہو گا۔ چین میں اس وائرس کو شکست دی جاچکی ہے لیکن وہاں اب بھی روزانہ درجنوں ایسے لوگ سامنے آ رہے ہیں جن میں کورونا وائرس تو موجود ہے لیکن ان میں اس کی علامات ظاہر نہیں ہوئیں۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ یہ وائرس انسانوں میں موجود رہے گا اور فلو کی طرح موسمی بیماری بن جائے گا۔ چنانچہ انسانوں کو طویل عرصے تک کورونا وائرس کے ساتھ زندہ رہنا ہو گا۔ “ واضح رہے کہ دنیا بھر کے ماہرین اسی خدشے کا اظہار کر رہے ہیں کہ کورونا وائرس کا ہمیشہ کے لیے خاتمہ ممکن نظر نہیں آ رہا۔ کئی ممالک میں انتہائی سخت لاک ڈاﺅن اور دیگر کڑے اقدامات کے باوجود وائرس مکمل ختم نہیں ہوا اور اس میں چین کی مثال سرفہرست ہے۔چنانچہ ممکن ہے کہ انسانوں کو طویل عرصے تک اس وائرس کے ساتھ رہنا پڑے۔“

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -