کورونا وائرس نے برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کو اتنی شدت سے نشانہ کیوں بنایا؟ برطانوی ڈاکٹر نے پریشان کن وجہ بتادی

کورونا وائرس نے برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کو اتنی شدت سے نشانہ کیوں بنایا؟ ...
کورونا وائرس نے برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کو اتنی شدت سے نشانہ کیوں بنایا؟ برطانوی ڈاکٹر نے پریشان کن وجہ بتادی

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کورونا وائرس میں مبتلا ہوئے اور ان کی حالت کافی تشویشناک رہی، حتیٰ کہ کئی دن انہیں انتہائی نگہداشت وارڈ میں گزارنے پڑے۔ اب ڈاکٹروں نے وزیراعظم جانسن کی حالت زیادہ بگڑنے کی بھی وہی وجہ بتا دی ہے جس سے ماہرین کورونا وائرس پھیلنے کے بعد سے متنبہ کرتے آ رہے ہیں۔ میل آن لائن کے مطابق ڈاکٹر اسیم ملہوترا نے بتایا ہے کہ وزیراعظم جانسن کی صحت اس لیے زیادہ تشویشناک ہوئی کیونکہ وہ موٹاپے کا شکار تھے اور جو شخص موٹاپے کا شکار ہو اس کی کورونا وائرس سے موت واقع ہونے کا خطرہ 10گنا زیادہ ہوتا ہے۔

کنسلٹنٹ کارڈیالوجسٹ ڈاکٹر ملہوترا کا کہنا تھا کہ وزیراعظم جانسن کی طرح دیگر کئی وزراءبھی کورونا وائرس میں مبتلا ہوئے لیکن ان کی حالت زیادہ نہیں بگڑی اور وہ بہت جلد صحت مند ہو گئے۔ اس کی ایک بڑی وجہ یہ تھی کہ وہ لوگ موٹاپے کا شکار نہیں تھے۔“ رپورٹ کے مطابق دیگر جن برطانوی حکومتی عہدیداروں کو کورونا وائرس لاحق ہوا ان میں ہیلتھ سیکرٹری میٹ ہین کک، چیف میڈیکل آفیسر کرس وائٹی، چیف ایڈوائزر ڈومینیک کمنگزاور وزیرصحت نادین ڈوریس و دیگر شامل تھے۔واضح رہے کہ برطانیہ میں اب تک کورونا وائرس کے 1لاکھ 61ہزار مصدقہ مریض سامنے آ چکے ہیں اور 21ہزار 678اموات ہو چکی ہیں۔

مزید :

برطانیہ -