لیگی دھڑوں کا اتحاد ،شجاعت کی پگاڑا اور غوث علی شاہ سے ملاقات ،تعاون کی درخواست

لیگی دھڑوں کا اتحاد ،شجاعت کی پگاڑا اور غوث علی شاہ سے ملاقات ،تعاون کی ...

کراچی ( آن لائن +اے این این )مسلم لیگ(ق) کے صدر چوہدری شجاعت حسین طویل عرصے بعد متحرک،لیگی اتحاد کا بیڑا اٹھا لیا،غوث علی شاہ اور پیر پگاڑا سے ملاقاتیں،متحدہ مسلم لیگ میں شمولیت کی دعوت،دونوں رہنماؤں نے مکمل تعاون کی یقین دھانی کرا دی۔تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ(ق) کے صدر چوہدری شجاعت حسین ایک بار پھر مسلم لیگی دھڑوں کے اتحاد کے لئے متحرک ہو گئے جنھوں نے کراچی کا دورہ کر کے مسلم لیگ(فنکشنل) کے سربراہ پیر پگاڑا اور مسلم لیگ(ن) کے ناراض رہنما سید غوث علی شاہ سے ملاقات کرے دونوں رہنماؤں کو متحدہ مسلم لیگ میں شمولیت کی دعوت دی ہے۔پیر پگاڑا سے ملاقات کے بعد چوہدری شجاعت حسین نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہماری خواہش ہے کہ کراچی کا امن بحال ہو ، کراچی کے امن سے پورے ملک کا امن ہے ، کراچی میں امن قائم ہو تو پورے ملک میں امن ہو گا ، کراچی میں امن کی ٹھنڈی ہوائیں چل رہی ہیں جو ملک میں امن لائیں گی ، مجھے امید ہے کہ سیاسی جماعتیں اپنے اندر چھپے جرائم پیشہ عناصر سے لا تعلقی کا اظہار کرینگی ، پی پی اور ایم کیو ایم کے تحفظات دور ہونے چاہئیں، فوج کے اقدامات کی مکمل سپورٹ کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پیر پگاڑا سے تمام معاملات پر بات ہوئی ہے ، مسلم لیگ کے سب دھڑوں کو اکٹھا ہونا پڑے گا ۔ مسلم لیگ فنگشنل کے رہنما صدر الدین راشدی نے کہا ہے کہ وقت کی ضرورت ہے کہ قوم ایک صفحے پر اکٹھی ہو ، ملک کی سلامتی کے لئے مفتقہ فیصلہ کر کے ملک کو بچانے کی بات کی جائے ، ملک ہے تو ہم ہیں ، ملک نہیں تو ہم بھی نہیں ، ملک نہیں ہو گا تو ہمارے سر پہ ہاتھ رکھنے والا کوئی نہیں ہو گا ، ہماری شناخت ملک سے ہے ، ہمار ے بزرگوں نے ملک کے لئے قربانیاں دیں اور ہم بھی ملک کے لئے قربانیاں دیں گے ۔بعد میں چوہدری شجاعت حسین نے مسلم لیگ(ن) کے ناراض رہنما سید غوث علی شاہ سے ملاقات کی ۔ملاقات کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے غوث علی شاہ نے کہا کہ اس وقت مسلم لیگ ٹکروں میں بھٹی ہوئی ہے ہم چاہتے ہیں کہ تمام لیگیں اکٹھی ہو جائیں، ہم چاہتے ہیں کہ مسلم لیگ کے جذبے کو اکٹھا کیا جائے، جتنی پارٹیاں اکٹھی ہونگی ملک کیلئے اتنا ہی بہتر ہوگا جب سیاسی جماعتیں ڈیلیور نہیں کرسکتی تو کوئی نہ کوئی آگے آتا ہے ، پاک فوج ملکی حفاظت کی ضامن ہے، فوج نے حالات کو بہتر بنانے کیلئے قدم اٹھایا ہے ، ہمیں اپنی سرزمین کی بہتری کیلئے اقدامات کرنے چاہیے ۔ انہوں نے کہاکہ لیگی دھروں کے اتحاد کیلئے ہم مختلف آپشنز پر غور کررہے ہیں فیصلہ کثرت رائے سے ہوگا۔ ہم مسلم لیگوں کو اکٹھا کرنے کے بعد دیگر ہم خیال جماعتوں سے بھی رابطے کریں گے، مسلم لیگ کبھی مردہ گھوڑاتھی نہ ہوگی۔ میں مسلم لیگ (ن) سے نہ مل رہا ہوں اور نہ اس سے کوئی واسطہ ہے۔ اس موقع پر چوہدری شجاعت حسین نے کہاکہ ہم غوث علی شاہ کی دعوت پر یہاں آئے ہیں، ہم نے مسلم لیگ کے اتحاد پر بات چیت کی ہے، پاکستان میں مسلم لیگ واحد جماعت ہے جو ملک کے قیام سے لیکر آج تک زندہ ہے جو نئی جماعتیں بنی ہیں انہوں نے بھی مسلم لیگ سے ہی نام رکھا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ہماری کوشش ہے کہ مسلم لیگ کے تمام دھڑے اکٹھے ہوجائیں، ملکی حالات کا بھی تقاضا ہے مسلم لیگ لیگوں کا اتحاد ہو جا ئے ۔ انہوں نے کہاکہ آج کراچی کے حالات افسوسناک ہیں، فوج نے حالات کو بہتر بنانے کیلئے اقدامات اٹھائے ہیں اور وہ اپنا کردار اداکررہی ہے ۔ لیگی دھڑوں کے اتحاد سے متعلق ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ فوج اپنا کام کررہی ہے ہم اپنا کام کررہے ہیں، فوج کا کسی معاملے سے کوئی تعلق نہیں۔ انہوں نے کہاکہ ایم کیو ایم کے تحفظات کو دور ہونا چاہیے ، ایم کیو ایم میں پڑھے لکھے اور اچھے لوگ موجودہیں اگر ایم کیو ایم میں جرائم پیشہ عناصر موجود ہیں تو ان سے نجات حاصل کرنی چاہیے۔

مزید : صفحہ اول