عمرا ن خان ضمنی انتخابات سے بھاگنے کیلئے دھرنے کی باتیں کر رہے ہیں: مسلم لیگ ن

عمرا ن خان ضمنی انتخابات سے بھاگنے کیلئے دھرنے کی باتیں کر رہے ہیں: مسلم لیگ ن

اسلام آباد(آئی این پی)پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنماؤں اورسینئروفاقی وزراء نے کہا ہے کہ عمران خان خیبر پختونخوا میں اپنی ناکامی چھپانے اور ضمنی انتخابات سے بھاگنے ک کیلئے دوبارہ دھر نے کی باتیں کر رہے ہیں، خیبرپختونخوا میں تاریخ کی سب سے بڑی کر پشن کی جارہی ہے،ایک سازش کے تحت ملک کے آئینی اداروں کو تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے، عمران خان نے ملک کے مستقبل پر سیاست کی ،سیاسی انتشار پاکستان کے مفاد میں نہیں،عمران خان کو اگر الیکشن کمیشن کے ممبران پر کوئی اعتراض ہے تو اس کیلئے سپریم جوڈیشل کمیشن کا آئینی راستہ موجودہے،پاکستان کی اعلیٰ عدلیہ نے مسلم لیگ (ن) پر دھاندلی کے الزامات مسترد کئے،جوڈیشل کمیشن کے 250صفحات کی رپورٹ میں ایک لفظ بھی دھاندلی کا استعمال نہیں ہوا، ٹی وی پرارکان پارلیمنٹ کو’’بے غیرت‘‘ کہنے پرقومی اسمبلی میں عمران خان کیخلاف تحریک استحقاق جمع کرائیں گے۔جمعہ کو یہ بات وفاقی وزیر تجارت انجینئرخر م دستگیر ،نجکاری کمیشن کے چےئر مین محمد زبیر عمر ،ممبر قومی اسمبلی دانیال عزیز ،مائزہ حمیداورمریم اورنگزیبنے پر یس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کی۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ چند روز سے ایک مرتبہ پھر پچھلے سال کی طرح دشنام طرازی کا سلسلہ دوبارہ شروع کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے، پاکستان کی عدلیہ نے بشمول سپریم جوڈیشل کمیشن نے یہ بات اب پتھر پر لکیر کی طرح لکھ دی ہے کہ 2013 کے انتخابات میں (ن) لیگ کا دھاندلی سے کوئی تعلق ثابت نہیں ہوا، کوئی شواہد کسی عدالت نے قبول نہیں کئے، حکومت نے تحریک انصاف کے مطالبے پر جب سپریم جوڈیشل کمیشن تشکیل دیا تو انہوں نے وہ الزامات وہاں پر پیش نہیں کئے جو روزانہ میڈیا پر دوہرائے جاتے تھے۔ وفاقی وزیر تجارت نے کہا کہ جوڈیشل کمیشن کے تینوں فیصلوں میں (ن) لیگ کے امیدواروں پر انتخابی دھاندلی کا کوئی ذکر موجود نہیں، حالانکہ ان فیصلوں کے احترام میں(ن) لیگ نے ضمنی الیکشن لڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب بغیر کسی بنیاد اور شواہد کے دوبارہغیریقینی پھیلانے کی کوشش کی جا رہی ہے، دھاندلی کی گردان اب بند ہونی چاہیے افواہوں کی بنیادی پر آئینی اداروں کو تاراج کرنا مناسب نہیں، اگر کوئی سوچتا ہے کہ صرف خواہشات کی بنیاد پر ایسا ہو گا تو یہ بتا دینا چاہتا ہوں کہ اب ایسا کبھی نہیں ہو گا، تحریک انصاف ملک کی ترقی میں حکومت کی معاونت کیلئے تیار نہیں، مسلم لیگ(ن) عوام کی عدالت میں تحریک انصاف کا مقابلہ کرے گی۔ چیئرمین نجکاری کمیشن زبیر عمر نے کہا کہ جوڈیشل کمیشن کے قیام سے پہلے (ن) لیگ اور تحریک انصاف کی قیادت کے مابین مفاہمت کی ایک یادداشت پر دستخط ہوئے تھے جس کے مطابق اگر تحریک انصاف کے الزامات ثابت نہ ہوئے تو وہ اپنے الزامات واپس لیں گے بلکہ عمران خان نیکہا تھا کہ وہ خود چل کر جائیں گے اور وزیر اعظم نواز شریف کو مبارکباد دیں گے، انجینئر خرم دستگیر نے کہا کہ ضمنی انتخابات شفاف اور پر امن طریقے سے منعقد ہوں گے، تحریک انصاف سے مقابلہ عوام کی خدمت کے حوالے سے ہے، جب کارکردگی کا مقابلہ ہو گا تو پھر پتہ چلے گا۔ایک سوال کے جواب میں ان کاکہناتھاکہ این اے 125کا معاملہ عدالت میں پہلے ہی جا چکا تھالہٰذاوہاں ضمنی انتخاب ممکن نہیں۔ ایک اورسوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ بشمول عدلیہ تمام آئینی اداروں کا احترام (ن) لیگ کے منشور میں شامل ہے اور ہم نے اس بات کا حلف اٹھایا تھا۔

مزید : صفحہ آخر