ایس پیز سٹی انو یسٹی گیشن اور آپر یشن کے دفاتر میں بجلی چوری کا انکشاف

ایس پیز سٹی انو یسٹی گیشن اور آپر یشن کے دفاتر میں بجلی چوری کا انکشاف

لاہور(بلال چودھری)شہریوں اور ماتحت ملازمین و افسروں کیلئے قانون کا درس ،قانون شکنی کرنیوالے کسی بھی اچھے برے شہری کے لئے قابل تعزیر سزالیکن لاہور پولیس کے اعلیٰ افسران ’’نظریہ ضرورت‘‘ کو جواز بنا کر خود ہی قانون کی دھجیاں اڑانے لگے ۔ تھانہ لوئر مال کے علاقہ مکینوں نے متاثرہ شہری کی حیثیت سے احتجاج کیا ہے کہ پاور سپلائی کمپنیوں کی جانب سے بجلی چوروں کا بل علاقہ مکینوں سے وصول کرنے کے سبب وہ کیوں اپنی جیب سے قربانی دیں۔تفصیلات کے مطابق ایس پی سٹی آپریشن اور ایس پی سٹی انویسٹی گیشن کے دفاتر میں کھلے عام بجلی چوری کی جا رہی ہے۔آئی جی پنجاب ان افسران کے خلاف کارروائی کریں ورنہ بجلی چور پولیس کے خلاف سڑکوں پر نکل آئیں گے ۔تفصیلات کے مطابق ایس پی سٹی انویسٹی گیشن محمد نوید اور ایس پی سٹی آپریشن ہارون جویہ مبینہ طور پر بجلی چوری میں ملوث ہیں اور انہوں نے اپنے دفاتر میں بجلی کی ڈائریکٹ تاریں لگا رکھی ہیں۔لوئر مال کے مقامی رہائشیوں نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر نمائندہ "پاکستان" کوبتایا کہ دونوں افسران کے دفاتر میں بجلی کی تاریں بغیر میٹر کے ڈائریکٹ ٹرانسفارمر سے جا رہی ہیں جبکہ تھانہ لوئر مال پولیس اہلکار بھی بہتی گنگا میں ہاتھ دھوتے ہوئے چوری کی بجلی استعمال کر رہے ہیں ۔اہل علاقہ کے مطابق محمد نوید کے دفتر کے سامنے لگے ٹرانسفارمر سے بجلی کی ڈائریکٹ تاریں دفتر کے صحن میں موجود کمرے میں لگے ایک سرکٹ میں جا رہی ہیں جہاں سے پورے دفتر میں بجلی کی فراہمی کی جا رہی ہے جبکہ اس پورے عمل میں بجلی کے میٹر کا تکلف نہیں کیا گیا ہے ۔دوسری جانب ایس پی سٹی ہارون جویہ کے دفتر میں بجلی کی ڈائریکٹ تاریں تھانہ لوئر مال سے ہو کر جا رہی ہیں جبکہ تھانہ لوئر مال میں یہ تاریں میٹرو بس پل کے ساتھ لگے ایک ٹرانسفارمر سے ڈائریکٹ آ رہی ہیں ۔اہل علاقہ کے مطابق چونکہ بجلی چور ی کرنے والے پولیس کے اعلی افسران ہیں اسی وجہ سے ان کے خلاف کوئی بھی شکایت کرنے کی جسارت نہیں کرتا ہے۔ملک بھر میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کے باعث غریب عوام کا جینا محال ہوچکا ہے جبکہ عوام چوری کی بجلی استعمال کرنے والوں کی وجہ سے پہلے ہی بجلی چوروں کا بل بھی اپنے جیب سے ادا کرنے پر مجبور ہیں اور اس صورت حال میں اگرقانون کے محافظ ہی قانون شکنی کرنے لگ جائیں گے تو پھرغریب لوگوں کا تو اللہ ہی حافظ ہوگا۔ وزیراعلی پنجاب اور آئی جی پنجاب مشتاق سکھیرا سے اپیل ہے کہ بجلی چور پولیس کے خلاف بلاامتیاز کارروائی عمل میں لائی جائے ۔اس حوالے سے دونوں افسران کے دفاتر میں رابطہ کیا گیا تو ان کے ریڈرز نے بتایا کہ ایس پی صاحبان چھٹی پر ہیں جبکہ ریڈر محمد پرویز کے مطابق جہاں سے پورے دفتر کو چوری کی بجلی سپلائی کی جا رہی ہے وہ ڈی ایس پی نوید ارشاد کے دفتر کا کمرہ ہے ان کو اس حوالے سے معلومات نہیں ہیں ۔جبکہ ڈی ایس پی نوید ارشاد کے دفتر میں رابطہ کیا گیا تو ان کے ریڈر کے مطابق ان کااس کمرے سے کوئی تعلق نہیں ہے جہاں سے بجلی کی سپلائی دی جا رہی ہے۔

مزید : علاقائی