بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو قتل کے مقدمہ میں نامزد کر دیا گیا

بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو قتل کے مقدمہ میں نامزد کر دیا گیا

لاہور( کرائم سیل) بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو بھی مقدمہ قتل میں نامزد کر دیا گیا اوورسیز پاکستانی کیمونٹی کے ساتھ ناانصافی پر مبنی سلوک قابل مذمت ہے ‘ چیف جسٹس آف پاکستان خصوصی طور پر نوٹس لیں ‘ نامزد ملزمان کی روزنامہ پاکستان سے گفتگو ‘ تفصیلات کے مطابق صدر پولیس اسٹیشن گجرات میں سید علی شاہ کی بیوہ نے مقتول شوہر کی ایف آئی درج کرائی جس میں جاوید شاہ ‘ اور ظاہر شاہ کو ملزم نامزد کیا گیا جبکہ حیران کن بات یہ ہے کہ بیوہ کی مدعیت میں درج ایف آئی آر میں بیرون ملک مقیم جاوید شاہ ‘ اور ظاہر شاہ کے عزیزو اقارب کو بھی ملزم نامزد کر دیا گیا جن میں عمران شاہ ‘ عامر شاہ ‘ کامران شاہ اور تنویر شاہ اٹلی میں مقیم ہیں جبکہ صابر شاہ فرانس اور کوثر شاہ امریکہ میں رہائش پذیر ہیں روزنامہ پاکستان سے ٹیلی فون پر گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ انکا اس قتل سے کوئی تعلق نہیں وہ بے گناہ ہیں انہوں نے یہ دعوی کیا کہ مقتول کی بیوہ کی طرف سے مسلسل دھمکی آمیز پیغامات مل رہے ہیں اور کچھ افراد انہیں بلیک میل کرنے کی کوشش بھی کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ ہم روزنامہ پاکستان کے توسط سے چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کرتے ہیں کہ اوورسیز پاکستانیوں کے ساتھ ہونے والی اس زیادتی کا نوٹس لیں انہوں نے کہا کہ پولیس غیر جانبدارانہ تحقیقات کرے تاکہ حقیقت سامنے آ سکے ‘ یہ بات بہت اہم ہے کہ مقتول سید علی شاہ مبینہ طور پر قتل کی وارداتوں میں ملوث تھا اور علاقے بھر میں اسکی شہرت اچھی نہیں تھی ‘ اسے عدالت نے اشتہاری بھی قرار دیا تھا وہ اپنے نواحی علاقے مدینہ سے کئی افراد سے زبردستی بھتہ بھی وصول کرتا تھا جس کی وجہ سے علاقہ مکین اس سے بری طرح تنگ تھے اس سلسلہ میں جب ایس ایچ او تھانہ صدر عدنان شہزاد سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ وہ چند یوم قبل ہی تھانہ صدر کے ایس ایچ او تعینات ہوئے ہیں مذکورہ کیس کے بارے میں پڑھ کر ہی وہ رائے دے سکتے ہیں ۔

مزید : علاقائی