حکومت الطاف کے خلاف مقدمہ چلائے اور متحدہ پر پر پابندی عائدکرے،ایم کیو ایم اردو بولنے والوں کی اکثریت کی نمائندگی نہیں کرتی ہے:شاہ اویس نورانی

حکومت الطاف کے خلاف مقدمہ چلائے اور متحدہ پر پر پابندی عائدکرے،ایم کیو ایم ...
حکومت الطاف کے خلاف مقدمہ چلائے اور متحدہ پر پر پابندی عائدکرے،ایم کیو ایم اردو بولنے والوں کی اکثریت کی نمائندگی نہیں کرتی ہے:شاہ اویس نورانی

  

کراچی(نیوز ڈیسک)ایم کیو ایم اردو بولنے والوں کی اکثریت کی نمائندگی نہیں کرتی ہے، کراچی کے شہری بانیان پاکستان کی اولادیں ہیں، وہ کیسے دہشت گردی ، قتل و غارت گری، بھتہ خوری اور سے بڑھ کر پیارے وطن کو توڑنے اور اسے گالیاں دینے والوں کی حمایت کرسکتی ہے، حکومت سیاسی مصلحتوں اور بیرونی دباؤ سے بالاتر ہو کر بلاتاخیر الطاف پر غداری کا مقدمہ چلائے اور ایم کیو ایم پر پابندی لگائے۔

” الطاف حسین کو کہا ہے کہ وہ فی الحال خود کو ایم کیو ایم سے الگ رکھیں“ فاروق ستار کی گفتگو نے کئی سوالوں کو جنم دیدیا

برنس روڈ تا کراچی پریس کلب تک نکالے جانے والے’’پاکستان زندہ باد مارچ‘‘ سے خطاب کرتے ہوئے جمعیت علماء پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل اور مرکزی جماعت اہل سنت کے نگران اعلیٰ شاہ محمد اویس نورانی صدیقی نے کہا کہ بھارت اور اسرائیل کے پروردہ لوگوں کو مزید موقع دینا بھی ملک و قوم کے ساتھ غداری ہوگی، تیس سال سے پاکستان کے معاشی حب اور منی پاکستان شہر کراچی کو دہشت گردوں کے ہاتھوں یرغمال بنانے کا موقع دینے کا بعدمزید موقع دینا پاکستان سے بے وفائی نہیں ہے تو کیا ہے؟

انہوں نے کہا کہ فیصلوں کے لئے حالات سازگار ہوں تو موقع گنوانا تاریخ کی سنگین غلطی شمار ہوتی ہے اور لگتا یہ کہ موجودہ حکومت نے بھی سنگین غلطیاں کرنا وطیرہ بنالیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کو سمجھنا ہوگا کہ ملک دشمنوں کے خلاف یہ فقط جذبات نہیں بلکہ پاکستان کی سالمیت اور مسئلہ کشمیر پر پاکستان کی کوششوں کو رائیگاں جانے سے بچانے کے لئے وقت کا تقاضہ ہے کہ غداران وطن اور ان کے پیروکاروں کو پاکستان سے ورافتہ محبت کرنے والوں کی ترجمانی کرتے ہوئے سخت ترین سزا دی جائے۔

حیدرآباد،لطیف آباد چار نمبر پر مبینہ پولیس مقابلے میں تین زخمی ڈاکو گرفتار ،اسلحہ اور چھینی گئی موٹر سائیکل برآمد

مزید :

کراچی -