سیلاب کا خطرہ نہیں کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے تیار ہیں :چیئر مین فلڈ کمیٹی پنجاب

سیلاب کا خطرہ نہیں کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے تیار ہیں :چیئر مین ...

  

لاہور (صباح نیوز)چیئرمین فلڈ کمیٹی و صوبائی وزیر ملک ندیم کامران نے کہا ہے کہ فی الحال سیلاب کا خطرہ نہیں تاہم کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے تیار ہیں۔سپارکو اور محکمہ موسمیات کی مہیا کردہ معلومات کے مطابق بارشوں کا سبب بننے والے موسمیاتی سسٹم پر مسلسل نظر رکھے ہوئے ہیں ۔تما م دریاؤں اور برساتی نالوں میں پانی معمول کے مطابق بہہ رہا ہے ، حالیہ بارشیں مقامی نوعیت کی ہیں۔ دریاؤں کے کیچ منٹ ایریاز میں فوری طور پر غیر معمولی بارشوں کی صورت حال نہیں ہے۔یہ بات انہوں نے گزشتہ روز سیلاب کی صورت حال کے ایک جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے بتائی۔ اجلاس میں سیلاب سے متعلقہ تمام محکموں کے نمائندے موجود تھے۔ ملک ندیم کامران نے کہا کہپی ڈی ایم اے نے تمام vulnerable 20اضلاع جو دریاؤں کی گزرگاہوں کے قریب واقع ہیں کی ضلعی انتظامیہ کو ایک ایک کروڑ روپے کے ایمر جنسی فنڈز فراہم کر دیے ہیں جن کا مقصد سیلاب آنے پر کسی بھی ہنگامی صورتحال میں ریلیف اور ریسکیو کے سامان کی فوری خریداری کو ممکن بنانا ہے ۔ اسی طرح اضلاع کی ڈیمانڈ کے مطابق ریسکیو اور ریلیف کا مزید سامان خرید کر ان کے حوالے کر دیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ موسم کی صحیح صورتحال جانے اور مون سون کی بارشوں کے بارے میں ممکنہ حد تک درست معلومات کے حصول کیلیے محکمہ موسمیات، پاکستان ایئرفورس،سپارکو، این ڈی ایم اے اور ایف ایف سی کے ساتھ پی ڈی ایم اے کا مسلسل رابطہ اور معلومات کے تبادلے کا عمل جاری ہے ۔ محکمہ موسمیات نے لاہور ، سیالکوٹ اور منگلا کے مقامات پر نئے موسمی ریڈارز لگانے کی بھی منصوبہ بندی کرلی ہے ۔ ان ریڈارز کی تنصیب سے سیلا ب کی پیشگی اطلاع اور پیش بندی میں بڑی مدد ملے گی۔ بالخصوص مقبوضہ کشمیر اور بھارت کی طرف سے اچانک آجانے والی سیلابی پانی کے بارے میں پہلے ہی سے اطلاع ہو جائے گی۔ پی ڈی ا یم اے کی طرف سے بھارت سے متصل اضلاع نارووال، سیالکوٹ، گجرات اور قصور کے ڈی سی اوز کو دریاوں کے کیچ مینٹ ایریا ز میں ہونے والی بارشوں کے بارے میں خاص طور پر باخبر رہنے کی تاکید کی گئی ہے ۔ چیئرمین فلڈکمیٹی نے بتایا کہ سیلاب کے دنوں میں لوگوں کی طرف سے غیر قانونی طور پر دریا کے بندوں اور پشتوں کوتوڑنے کی روک تھام کیلئے محکمہ آبپاشی کی نشاندہی پر ایسے تمام مقامات پر پولیس کی نفری تعینات کردی گئی ہے اس سلسلے میں سپیشل برانچ کی رپورٹوں کی روشنی میں بھی اقدامات کیے جا رہے ہیں۔ علاوہ ازیں دریاؤں اور ندی نالوں کے بیڈز میں رہائش پزیر لوگوں کوممکنہ سیلاب کے حوالے سے خبردارکر دیا گیا ہے اور دریاؤں و ندی نالوں کے راستوں میں قائم کی گئی ناجائز تجاوزات کو ہٹانے کی ہدایات جاری کردی گئی ہیں جن پر متعلقہ محکمے بالخصوص محکمہ آبپاشی عملدرآمد کرا رہا ہے۔ سیکرٹری لوکل گورنمنٹ نے تمام پانچ بڑے شہروں کے واساکے انتظامات کا جائزہ لینے کیلئے دورے کیے ہیں۔ شہری حدود میں واقع نالوں کی ڈی سلٹنگ کا کام مکمل کرالیا گیا ہے جبکہ وزیر اعلی کی ہدایت کے مطابق اس تمام پراسس کی تھرڈ پارٹی ویلیڈیشن بھی کرائی جا رہی ہے ۔

مزید :

علاقائی -