نواب ٹاؤن ،قتل ہونیوالی گھریلو ملازمہ کی نعش کو ورثاکے حوالے کر دیاگیا

نواب ٹاؤن ،قتل ہونیوالی گھریلو ملازمہ کی نعش کو ورثاکے حوالے کر دیاگیا

  

لاہور ( کرائم رپورٹر) نواب ٹاؤن کے علاقہ جی بلاک میں مبینہ طور پر مکان مالک کے ہاتھوں قتل ہونیوالی گھریلو ملازمہ کی نعش کو پولیس نے پوسٹمارٹم مکمل ہونے کے بعد اس کے ورثاکے حوالے کر دیا جبکہ انویسٹی گیشن پولیس نے زیرحراست ملزم سے مختلف پہلوؤں پر تفتیش کا سلسلہ شروع کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ایک روز قبل رات کو جی بلاک نواب ٹاؤن میں اوکاڑہ سے تعلق رکھنے والی ایک بچے کی ماں صغراں بی بی کو اس کے مکان مالک نصیر احمد نے مبینہ طور پر فائرنگ کرکے قتل کر دیا تھا جس کے بعد ملزم نے گرفتاری سے بچنے کیلئے اس کی خودکشی کا ڈرامہ رچانے کی کوشش کی تھی تاہم پولیس نے جائے وقوعہ سے ملنے والے شواہد کی روشنی میں ملزم کو حراست میں لیتے ہوئے اس سے تفتیش شروع کر دی تھی۔ پولیس ذرائع کے مطابق مقتولہ صغراں بی بی اپنی بھانجی عذرا کے ساتھ ملزم نصیر کے گھر میں ملازم تھی جہاں پر ملزم اس کی بھانجی عذرا سے اپنے تعلقات استوار کرنا چاہتا تھا جس کے بارے میں صغراں کی جانب سے اس کی بیوی کو بتانے کی دھمکی پر ملزم نے اسے قتل کیا تھا ، تاہم اس حوالے سے انویسٹی گیشن ونگ کی مختلف ٹیمیں تفتیش کر رہی ہیں جس کے مکمل ہونے کے بعد ہی اصل حقائق واضح ہونگے۔ دریں اثناء پولیس نے مقتولہ کے بھائی کی درخواست پر نامزد ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے مقتولہ صغراں بی بی کی نعش کو پوسٹمارٹم مکمل ہونے کے بعد اس کے ورثاء کے حوالے کر دیا ہے جو اس کو لیکر اپنے آبائی علاقہ میں چلے گئے ہیں۔

مزید :

علاقائی -