مناواں ،سی ٹی ڈی کے ہاتھوں ہلاک دہشتگردوں کا پوسٹمارٹم نہ ہو سکا،مفروروں کی گرفتاری کیلئے سرچ آپریشن جاری

مناواں ،سی ٹی ڈی کے ہاتھوں ہلاک دہشتگردوں کا پوسٹمارٹم نہ ہو سکا،مفروروں کی ...

  

لاہور(وقائع نگار) مناواں کے علاقہ میں گزشتہ رات کو سی ٹی ڈی کے ہاتھوں ہلاک ہونے والے دہشتگردوں کا تاحال پوسٹ مارٹم نہ ہو سکا جبکہ مفرور دہشتگردوں کی گرفتاری کے لیے مناواں ،ہربنس پورہ ،باٹاپور ،برکی اور دیگر بارڈر کے علاقوں میں سرچ آپریشن جاری ہے ۔ذرائع کے مطابق ہفتہ اور اتوار کی درمیانی شب کو رات 11بجے کے قریب سی ٹی ڈی نے مناواں کے علاقہ میں کارروائی کی اور دہشتگردی کا بڑا منصوبہ ناکام بنادیا۔ سری لنکن کرکٹ ٹیم اور اقبال ٹاؤن مون مارکیٹ حملوں میں ملوث4 دہشت گرد مارے گئے۔دہشتگردوں کے قبضے سے بھاری مقدار میں اسلحہ برآمد کر لیا گیا۔سی ٹی ڈی ذرائع کے مطابق گرفتار دہشت گردوں کی نشاندہی پر مناواں لکھو ڈیر کے علاقے میں چھاپہ مار ا توانہوں نے فائرنگ کر دی۔جوابی فائرنگ سے4 دہشتگرد موقع پر ہلاک ہوگئے جبکہ4 فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ ذرائع کے مطابق دہشتگردوں کی شناخت زبیر عرف نیک محمد،عبدالوہاب،ارشد احمد اور عتیق الرحمان کے نام سے کر لی گئی ہے۔مقابلے میں مارے جانے والے چاروں دہشت گردوں کا تعلق کالعدم تنظیم سے ہے۔ذرائع کے مطابق دہشتگرد لاہور میں سرکاری املاک کو نقصان پہنچانا چاہتے تھے۔ ہلاک ہونے والے دہشتگردوں کے قبضے سے راکٹ لانچر، ہینڈ گرنیڈ اور دیگر اسلحہ سمیت بارودی مواد برآمد کیا گیا ہے جبکہ حساس عمارتوں کے نقشہ جات بھی برآمد کئے گئے ہیں۔ترجمان سی ٹی ڈی کے مطابق فرار ہونے والے دہشت گردوں کی تلاش کے لئے داخلی اور خارجی راستوں پر ناکہ بندی کردی گئی ہے اور اس حوالے سے مناواں ،ہربنس پورہ ،باٹاپور ،برکی اور دیگر بارڈر کے علاقوں میں سرچ آپریشن جاری ہے ۔واضح رہے کہ مارچ 2009 میں لاہور میں12 دہشتگردوں نے سری لنکا کی قومی کرکٹ ٹیم پر فائرنگ کی تھی جس کے نتیجے میں 6 پولیس اہلکار شہیداور7 کھلاڑیوں اور ایک ایمپائر سمیت 15 افراد زخمی ہوئے تھے۔دوسری جانب سی ٹی ڈی نے چاروں مارے جانے والے دہشتگردوں کی لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے لئے مردہ خانہ میں جمع کروا دیا ہے لیکن تاحال ان کا پوسٹ مارٹم نہیں ہو سکا ہے اور نہ ہی ان کے لواحقین میں سے کسی نے تاحال رابطہ کیا ہے ۔

مزید :

علاقائی -