رشوت ثابت ہونے پر ایس ایچ او تھانہ علی پور چٹھہ کے وارنٹ گرفتاری جاری

رشوت ثابت ہونے پر ایس ایچ او تھانہ علی پور چٹھہ کے وارنٹ گرفتاری جاری

  

گوجرانوالہ(بیورورپورٹ)ساڑھے چار لاکھ کی رشوت وصولی ثابت، ایس ایچ او علی پور چٹھہ کے وارنٹ گرفتاری جاری ہو گئے، انسپکٹر اقبال گورایہ نے سیاسی اثر سوخ کی بنا پر بے گناہ شہری گلزار احمد کو ناجائز طور پر حراست میں لیااور ساڑھے چار لاکھ روپے رشوت لیکر چھوڑ دیا، ڈائریکٹر اینٹی کرپشن رانا عبدالشکور نے کرپشن کیس میں جرم ثابت ہونے پر ایس ایچ او تھانہ علی پور چٹھہ کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دئیے ہیں۔

اور اینٹی کرپشن کے تفتیشی آفیسر کو حکم دیا ہے کہ ملزم ایس ایچ او کو گرفتار کر کے جیل بھجوا یا جائے تفصیلات کے مطابق انسپکٹر محمد اقبال گورائیہ نے سیاسی اثر سوخ کی بنا پر موضع عابد آباد کے رہائشی ایک بے گناہ شہری گلزار احمد کو ناجائز طور پر حراست میں لے لیا اور دباؤ ڈالا بعد ازاں ایس ایچ او نے رہائی کیلئے پانچ لاکھ روپے رشوت مانگی اور دو لاکھ روپے نقد اور اڑھائی لاکھ روپے مالیت کی مونجی رشوت لے کر اسے چھوڑ دیا شہری نے واقعہ پر ایس ایچ او کے خلاف درخواست دائر کی جس پر اینٹی کرپشن حکام نے ابتدائی تحقیقات کے بعد انسپکٹر محمد قبال گورائیہ کے خلاف تھانہ اینٹی کرپشن میں مقدمہ درج کر لیا ڈپٹی ڈائریکٹر اینٹی کرپشن کی طرف سے ملزم کو بار ہا مرتبہ موقع دیا گیا کہ اگر وہ بے گناہ ہے تو اپنی بے گناہی ثابت کرے لیکن وہ خود کو بے گناہ ثابت کرنے میں ناکام رہا جس پر ریجنل ڈائریکٹر اینٹی کرپشن رانا عبدالشکور سے اسکے وارنٹ گرفتاری جری کر دئیے ہیں۔

مزید :

علاقائی -