خارجہ پولیسی کمزور ہونے سے پڑوسی ممالک ہمارے خلاف ہو گئے :خورشید شاہ

خارجہ پولیسی کمزور ہونے سے پڑوسی ممالک ہمارے خلاف ہو گئے :خورشید شاہ

  

سکھر (صباح نیوز) قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید احمد شاہ نے کہا ہے کہ تعلق اور لاتعلقی چھپ نہیں سکتی۔ بھارت ہمارے خلاف انٹرنیشنل لابنگ کر رہا ہے۔ حکومت کی خارجہ پالیسی بہت کمزور ہو گئی ہے۔ حکومت کو چاہئے کہ سب کو اعتماد میں لے کر چلے ہمیں پاکستان کے مسائل مل بیٹھ کر حل کرنے چاہئیں۔ پیپلزپارٹی مفاہمت کی پالیسی پر عمل کرتی آئی ہے اور کرتی رہے گی۔ ہمیں اچھا نہیں لگتا کہ کراچی کا میئر جیل میں ہو ،کراچی کا میئر حکومت سے ضمانت لے اور جیل سے باہر آ کر شہر چلائے۔ ایک طرف الطاف حسین اور براہمداغ اور دوسری طرف بھارت ہے، خارجہ پالیسی کمزور ہونے سے پڑوسی ممالک ہمارے خلاف ہو گئے۔ ان خیالات کا اظہار خورشید شاہ نے ڈی سی او ہاؤس سکھرمیں صوبائی وزیر صحت سکندر میندھرو کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو میں کیا۔ خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ فاروق ستار نے الطاف حسین سے لاتعلقی کی ہے۔ 10 روز بعد سیشن ہو گا۔ اس میں باتیں ہوں گی۔ ساری چیزیں سامنے آئیں گی۔ یہ چیزیں چھپ نہیں سکتیں،ان کا کہناتھا کہ کشمیر کا مسئلہ ہمارے سامنے ہے۔ براہمداغ ادھر سے بول رہا ہے۔ الطاف حسین ادھر سے بول رہا ہے۔ بھارت بین الاقوامی سطح پر لابنگ کر رہا ہے۔ سفیروں کی بجائے سب کو کام کرنا چاہئے۔ خورشید شاہ کا کہناتھا کہ غلام محمد مہر میڈیکل کالج میں 67میڈیکل آفیسرز کی کمی ہے۔ 60 کے قریب نرسوں کی کمی ہے۔ پیرا میڈیکل اسٹاف کی بھی کمی ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ ہم بھرتیوں پر پابندیاں ختم کریں گے ہماری کوشش ہے کہ مارچ 2017ء تک گرلز ہاسٹل اور ایڈمنسٹریشن بلاک کو نئے کیمپس منتقل کر دینگے۔ ان کا کہنا تھا کہ سول ہسپتال میں ادویات وافر مقدار میں موجود ہیں۔ ہم ہسپتال میں قائم چار میڈیکل اسٹور بند کر دیئے ہیں۔ ہمارے پاس آئندہ سال ستمبر اکتوبر تک کا اسٹاف موجود ہے ان کا کہنا تھا کہ ابھی ہسپتالوں کی صورت حال مزید بہتر کرنے کی ضرورت ہے۔

مزید :

صفحہ اول -