جنوبی افریقہ‘ پریٹوریامیں روزنامہ پاکستان کی ٹیم کا پاکستانی ہائی کمیشن کا دورہ

جنوبی افریقہ‘ پریٹوریامیں روزنامہ پاکستان کی ٹیم کا پاکستانی ہائی کمیشن کا ...

  

جوہانسبرگ(بیورورپورٹ)روزنامہ پاکستان کی ٹیم نے گزشتہ روز پریٹوریا میں پاکستانی ہائی کمیشن کا دورہ کیا،پاسپورٹ آفس ،نادرا آفس، ویزا سیکشن اور ایمبیسی میں کام کروانے کے لئے آنے والے پاکستانی بھائیوں سے تفصیلی بات چیت کی،اور ان کے مسائل پر گفتگو کی،لیکن 14اگست کے پاکستانی کمیونٹی فنکشن میں سفیر پاکستان نجم الثاقب کی تقریر کے بعد تو لگتا ہے کوئی مسلہ رہا ہی نہیں،لوگ سفیر پاکستان کے اعلان کے بعد بہت خوش ہیں،روزنامہ پاکستان کی ٹیم جب ہائی کمیشن میں کمیونٹی ہال میں پہنچی توصدر پریٹوریا پاکستان ساؤتھ افریقہ ایسوسی ایشن اور سیکرٹری نشرواشاعت اورنگزیب گوگا بھائی فردا فردا ہر پاکستانی سے مل رہے تھے۔اور ان کے آنے کا مقصد پوچھ کر ان کی مدد کر رہے تھے،ڈپٹی ہائی کمشنر ڈاکٹر منظور چوہدری لوگوں سے صرف پاکستانی ہونے کی تصدیق کر رہے تھے اور انہیں متعلقہ شعبے میں بھیج رہے تھے،اس موقع پر ڈاکٹر منظور چوہدری نے پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ الحمداللہ ہائی کمیشن میں ہمارے پاکستانیوں کے کام دھڑا دھڑ ہو رہے ہیں،انہوں نے بتایا کہ پچھلے ہفتے میں ہی صرف 500پاکستانیوں کے پاسپورٹ245ویزے جن میں بزنس اور ٹورازم شامل لگے ہیں،اس موقع پر وسیم حیدر نے کہا کہ میں پہلے بھی آتا رہا ہوں لیکن بہت زیادہ سوال و جواب کے بعد واپس بھیج دیا جاتا تھا۔ کیوں کہ میں اسالم اسیکر پر تھا، لیکن آج میرا پاسپورٹ بغیر کسی سوال و جواب کے جمع ہو گیا ہے اور میں شکریہ ادا کرتا ہوں سفیر پاکستان کا جن کیوجہ سے ہمارے پاسپورٹ بننے میں آسانی آئی ہے، محمد فضیل نے کہا کہ مجھے بھی ہر دفعہ میرا ورک پرمٹ کا اسٹیکر جعلی بول کر واپس بھیج دیا جاتا تھا، لیکن آج بحثیت پاکستانی میرا پاسپورٹ جمع کیا گیا ہے،محمد فضیل نے کہا کہ کہاں ہیں وہ لوگ جو ہائی کمیشن والوں کو صرف باتیں کرتے تھے کیا ان لوگوں کو ایسے اچھے کام نظر نہیں آتے،اسنان آصف نے کہا کہ مجھے نہ تو اسالم کا پوچھا گیا اور نہ کسی اور پیپرز کا،اسنان آصف نے کہا کہ پراپیگنڈہ کرنے والے اب نہیں بولیں گے، کیوں کہ اب ہر کسی کا کام ہو رہا ہے،وہ بھی وئی آئی پی پروٹوکول کے ساتھ،شاید اتنی آسانی سے پاکستان میں بھی پاسپورٹ جمع نہ ہوتا ہو۔

مزید :

عالمی منظر -