ظلم و ستم کے باوجود کشمیریوں نے صبر کا دامن ہاتھ سے نہیں جانے دیا: علی گیلانی

ظلم و ستم کے باوجود کشمیریوں نے صبر کا دامن ہاتھ سے نہیں جانے دیا: علی گیلانی

  

سری نگر ( اے این این ) چیئرمین حریت کانفرنس سید علی گیلانی نے کہا ہے کہ بھارتی فوج کے ظلم و ستم کے باوجود کشمیریوں نے کبھی بھی صبر اور اخلاق کا دامن ہاتھ سے نہیں گرنے دیا ٗ بھارتی عوام کو تکلیف میں دیکھ کر ہمیں بھی دکھ ہوتا ہے ٗ بھارتی فوج جواہر لعل نہرو کے وعدوں کی پاسداری کرتے ہوئے باعزت طریقے سے کشمیر چھوڑ دے ٗ بھارت 70 سالوں میں مراعات کے سبزباغ دکھا کرکشمیریوں کے دل نہیں جیت سکا نہ آئندہ کبھی کامیاب ہوپائیگا ٗ ہمارا مطالبہ کوئی انوکھا نہیں ہے بھارتی پارلیمنٹ بھی حق خودارادیت کو تسلیم کرچکی ہے ۔ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارتی عوام کے ساتھ ساتھ وہاں کی فوج بھی انسانی رشتہ میں کشمیریوں کے بھائی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انہیں تکلیف میں دیکھ کر بحیثیت انسان ہمیں بھی دکھ ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم بھارتی فوج کو آج پہلی بار یہاں سے نکلنے کے لیے نہیں کہہ رہے ہیں، بلکہ 2009 میں ہم نے فوجی انخلا کی باضابطہ مہم چلائی اور 2010 میں ہم نے گو انڈیا گو بیک کے تحت بھارتی فوج کو یہاں سے چلے جانے کے لیے کہا جس حوالے سے مسرت عالم بٹ ابھی بھی جیل میں بند ہیں جنہوں نے اس میں بھرپور کردار ادا کیا تھا اور آج بھی ہم بہت ہی مہذب اور اخلاقی اقدار کا پورا پورا لحاظ کرتے ہوئے ان سے یہ مودبانہ درخواست کرتے ہیں کہ آپ 70سال سے ہم لوگوں کو تمام ظلم وجبر، مراعات اور لالچ اورسبز باغ دکھا کر بھی ہمارے دلوں کو جیتنے میں ناکام رہے ہیں۔

اور مستقبل میں بھی آپ اپنی اس مہم میں کبھی کامیاب نہیں ہو پائیں گے ۔

مزید :

عالمی منظر -