عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں طبی سہولتوں اور غذائی قلت کا نوٹس لے: حافظ سعید

عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں طبی سہولتوں اور غذائی قلت کا نوٹس لے: حافظ سعید

گوجرنوالہ ( بیورورپورٹ)جماعۃالدعوۃ پاکستان کے امیر پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ اور او آئی سی کشمیریوں کو بھارتی ظلم و بربریت سے نجات دلانے کیلئے عملی کردار اداکریں۔ بھارت پر دباؤ بڑھایا جائے کہ وہ اپنی آٹھ لاکھ فوج کشمیر سے نکالے۔ کشمیریوں کو حق خود ارادیت ملنے تک خطہ میں امن ممکن نہیں ۔ بین الاقوامی برادری مقبوضہ کشمیر میں ڈاکٹروں کی ٹیمیں بھجوانے کیلئے کردار ادا کرے۔ ان خیالات کا اظہارجماعۃالدعوۃ کے امیر حافظ محمد سعیدنے جناح پارک نزد جامع محمدیہ جی ٹی روڈ گوجرانوالہ پر کشمیر کانفرس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا مسلسل کرفیو کی وجہ سے لوگوں کو زبردست اذیت کا سامنا ہے۔ بھارتی فوج رات کی تاریکی میں گھروں میں گھس کر توڑپھوڑو گرفتاریاں کر رہی ہے اور خواتین و بچوں کو بھی ہراساں کیا جارہا ہے۔ اسی طرح راشن ڈپو بند کر دیے گئے ہیں۔ دودھ اور سبزیاں تک سری نگر جیسے شہروں میں نہیں آنے دی جارہیں۔ لیکن ان تمام مسائل کے باوجود مظلوم کشمیری غاصب بھارت کے سامنے جھکنے کیلئے تیار نہیں ہیں اور برستی گولیوں میں پاکستانی پرچم لہرا رہے ہیں۔ان کاکہناتھاکہ حکومت پاکستان کو کشمیریوں کی نمائندگی کا حق ادا کرنا چاہیے اور اس مسئلہ کو تمام بین الاقوامی فورمز پرپوری قوت سے اٹھانا چاہیے۔انہوں نے کہاکہ برہان وانی کی شہادت کے بعد بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں مزید فوج بھجوائی اور بدترین ظلم و ستم کی نئی تاریخ رقم کی جارہی ہے۔ پورا کشمیر جل رہا ہے لیکن اس کے باوجود کشمیریوں کے عزم و حوصلہ میں کوئی کمی نہیں آئی اور لاکھوں کشمیری روزانہ سڑکوں پر نکل کر بھارتی ظلم و جبر کے خلاف احتجاج کر رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ قائد اعظم نے کہا تھا ، کشمیر پاکستان کی شہہ رگ ہے۔پالیسی کی بنیاد یہ جملہ بنے گا تو بڑا کردار ادا کرسکیں گے۔ انہوں نے کہاکہ کشمیریوں کی جدوجہد آزادی جاری ہے اور جاری رہے گی۔ مظلوم کشمیریوں کی ہر ممکن مددوحمایت کا سلسلہ جاری رکھیں گے۔

مزید : صفحہ آخر