پانامہ لیکس حکمرانوں کو بہالے جائے گی: نعیم الحق

پانامہ لیکس حکمرانوں کو بہالے جائے گی: نعیم الحق
پانامہ لیکس حکمرانوں کو بہالے جائے گی: نعیم الحق

  

دبئی (طاہر منیر طاہر)پاکستان تحریک انصاف متحدہ عرب امارات کے زیر اہتمام دبئی میں یوم آزادی کے حوالے سے ایک تقریب ہوئی جس میں پاکستان سے تحریک انصاف کے سینیٹر مرکزی راہنما علی زیدی اور پاکستان تحریک انصاف کے سیکرٹری اطلاعات نعیم الحق نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔ اس موقع پر پی ٹی آئی متحدہ عرب امارات سے امجد اقبال امجد، میاں اویس انجم، عبیداللہ آف ڈوئیاں، محمد افضل بھٹی، چودھری محمد زبیر، چودھری حمزہ، ماجد شریف، انجینئر فیصل جاوید، خرم شہزاد، ڈاکٹر عمران اکبر، صوفی عمران آف سمندری ، ملک اصمام، راجہ ارشد، حاجی معروف، صفدر اقبال مرزا، چودھری خالد حسین، شیر اکبر آفریدی، شیخ عاطف، رضوان بنگش، عامر وقاص، اور دیگر بہت سے لوگوں نے شرکت کی۔

اس موقع پر شرکائے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ پانامہ لیکس موجودہ حکمرانوں کو اپنے ساتھ بہا لے جائے گی۔ موجودہ حکومت کرپشن میں جس قدر ڈوبی ہوئی ہے اسے دیکھ کر امید ہے کہ الیکشن کمیشن وزیراعظم کو نااہل قرا ر دے دے گا۔ موجودہ حکمرانوں اور اس کے وزرا نے کرپشن کر کے ملک کو تین سال پیچھے دھکیل دیا ہے اور عوام الناس کر غربت و افلاس میں مبتلا کر دیا ہے۔ ملک میں کرپشن، بے روزگاری ، مہنگائی، جہالت، دہشت گردی اور توانائی کے بحران میں دھکیل دیا ہے۔ پاکستان میں عوام کا جینا دوبھر ہو گیا ہے لیکن حکمران اپنی کرسی بچانے کے چکر میں ہیں، موجودہ حکومت چوروں اور لٹیروں پر مشتمل ہے جس نے پاکستان کو ہر طرف سے لوٹ لوٹ کر کھانا شروع کر دیا ہے۔ اس بات سے پاکستان کے 20 کروڑ عوام اب بخوبی آگاہ ہو چکے ہیں اور آنے والے انتخابات میں ووٹ کی طاقت سے اس حکومت کا قلع قمع کر دیں گے۔ مقررین نے کہا کہ اس وقت عمران خان ہی لوگوں کی امیدوں کا واحد سہارا ہیں جو پاکستان میں صحیح معنوں میں عوامی فلاحی حکومت قائم کریں گے جس میں غریبوں کو ریلیف ملے گا اور پاکستان میں خوشحالی کا دور دورہ ہو گا ۔ پی ٹی آئی کے متحرک کارکن امجد اقبال امجد نے عزامیہ اور تنقیدی نظم پڑھ کر حاضرین مجلس سے داد و تحسین وصول کی ۔ انہوں نے اپنی نظم کے ذریعے موجودہ حکومت اور حکمرانوں کے حالات بیان کئے اور آڑے ہاتھوں سب کی خبر لی۔ تقریب کے آخر میں کیک کاٹا گیا اور ایک دوسرے کو یوم آزادی کی مبارکباد دی گئی۔

مزید :

عرب دنیا -