خواتین کو یکساں حقوق دلانے کیلئے نیویارک میں برہنہ مردوزن کی پریڈ

خواتین کو یکساں حقوق دلانے کیلئے نیویارک میں برہنہ مردوزن کی پریڈ
خواتین کو یکساں حقوق دلانے کیلئے نیویارک میں برہنہ مردوزن کی پریڈ

  


نیو یارک (نیوز ڈیسک)مغرب میں خواتین کے یکساں حقوق کا نعرہ مدت سے بلند ہوتا چلا آرہا ہے اور صنفی امتیاز ختم کرنے کیلئے لوگ طرح طرح کے طریقے اپناتے ہیں لیکن امریکہ میں ایک ایسا طبقہ بھی ہے جو چاہتا ہے کہ اگر گرمی لگے تو خواتین بھی مردوں کی طرح اپنی قمیض اتار کر سڑکوں پر گھوم سکیں اور یہی حق دلانے کیلئے سینکڑوں کی تعداد میں خواتین و حضرات برہنہ سڑکوں پر نکل آئے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق جس دن امریکی خواتین کو ووٹ ڈالنے کا حق ملا اس دن کی یاد میں امریکہ میں مختلف قسم کی تقریبات ہوتی ہیں لیکن ایک نجی تنظیم ایسی بھی ہے جو اس دن کو ” گو ٹاپ لیس ڈے “ کے طور پر مناتی ہے ۔ اسی تنظیم کی جانب سے گزشتہ 9 سالوں سے یہ دن پورے تزک و احتشام کے ساتھ منایا جارہا ہے تاہم امسال اس پریڈ میں کثیر تعداد میں لوگوں نے برہنہ ہو کر شرکت کی اور نیویارک کی سڑکوں پر گشت کرتے رہے۔

’’مجھے میرے گاوں لے جار ہے ہیں تاکہ ۔۔۔‘‘چلتی ٹرین سے نوجوان لڑکی کی سوشل میڈیا پر ویڈیو اور اگلے دن موت ہو گئی،آخری پیغام کیا تھا؟جان کرآپ کے بھی رونگٹے کھڑے ہو جائیں گے

تنظیم کے منتظمین کا کہنا ہے کہ یہ دن منانے کا مقصد لوگوں کو یہ آگاہی دینا ہے کہ امریکی ریاست نیو یارک میں خواتین کا برہنہ چلنا قانونی ہے اور اگر خواتین ایسا کرنا چاہتی ہیں تو انہیں کوئی نہیں روک سکتا، اگر کوئی خاتون شرٹ کا وزن نہیں اٹھانا چاہتی تو وہ کہیں بھی اسے اتار سکتی ہے اور اس کام کیلئے اسے کسی پردہ داری کی ضرورت نہیں ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ خواتین کے مساوی حقوق کیلئے قانون سازی کرائی جاسکے تاکہ وہ بھی مردوں کے شانہ بشانہ ہر شعبہ زندگی میں بلا خوف و خطر ترقی کیلئے کام کرسکیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس