پاکستان کے دوست ملک میں 12سال بعد11خواتین کا سیریل کلر پکڑا گیا،مگر کیسے، تفصیل ایسی کہ جان کر آپ بھی تفتیشی اداروں کو داد دیں گے۔۔۔

پاکستان کے دوست ملک میں 12سال بعد11خواتین کا سیریل کلر پکڑا گیا،مگر کیسے، ...
پاکستان کے دوست ملک میں 12سال بعد11خواتین کا سیریل کلر پکڑا گیا،مگر کیسے، تفصیل ایسی کہ جان کر آپ بھی تفتیشی اداروں کو داد دیں گے۔۔۔

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک)چین میں پولیس نے چودہ سال کے دوران گیارہ خواتین کو موت کے گھاٹ اتارنے والے سیریل کلر کی گرفتاری کا دعویٰ کیا ہے۔باون سالہ گاوچینگ یانگ کو ایک گراسری سٹور سے اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ صوبہ گانژو کی جانب فرار ہونے کی کوشش کررہا تھا۔فاکس نیوز نے چینی میڈیا کے حوالے سے بتایا ہے کہ گرفتار ملزم نے انیس سو اٹھاسی سے دوہزار دو کے درمیان چودہ خواتین کے قتل کا اعتراف بھی کرلیا ہے۔رپورٹس کے مطابق سیریل کلر کا زیادہ تر نشانہ جوان عورتیں ہی بنتی رہی ہیں۔وہ قتل سے پہلے انہیں زیادتی کا نشانہ بناتا پھر موت کی نیند سلا دیتا، اس نے کچھ خواتین کو گلا کاٹ کر بھی قتل کیا ، ملزم کی سفاکیت کا نشانہ بننے والی خواتین میں سب سے کم عمر ایک آٹھ سالہ بچی تھی۔

روزنامہ پاکستان کی تازہ ترین اور دلچسپ خبریں اپنے موبائل اور کمپیوٹر پر براہ راست حاصل کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

پولیس کے مطابق ملزم کی وارداتوں کا انکشاف دوہزار چار میںایک قتل کی تفتیس کے دوران ہوا،جس کے بعد اس کے ایک رشتہ دار کوکسی اور جرم میں گرفتار کیا گیا ،اس کے ڈی این اے کے نمونوں نے تفتیسی حکام کے لئے نئی راہیں کھول دیں پھر کڑیاں ملتی چلی گئیں،ملزم کو نفسیاتی مریض بھی قرار دیا جارہا ہے۔ملزم کے بیٹے نے میڈیا کو بتایا کہ اس کا باپ اپنی جوانی میں پائلٹ بننا چاہتا تھا لیکن سیاسی وجوہات کی بنا پر اپنے مقصد میں کامیاب رہا،اس زیادتی پر اس نے جرم کا راستہ اختیار کرلیا۔

مزید :

جرم و انصاف -