لیکچر زکے بعدکوچز کی عملی تربیت کا آغاز

لیکچر زکے بعدکوچز کی عملی تربیت کا آغاز

لاہور (سپورٹس رپورٹر) سپورٹس بورڈ پنجاب کے زیراہتمام ڈائریکٹر جنرل سپورٹس پنجاب ذوالفقار احمد گھمن کی نگرانی میں چیف منسٹر ٹیلنٹ ہنٹ پروگرام کے تحت مختلف کھیلوں کیلئے تعینات کئے گئے کوچز کاتربیتی کیمپ نشتر پارک سپورٹس کمپلیکس میں جاری ہے، لیکچر زکے بعدکوچز کی عملی تربیت کا آغاز ہوگیا ہے، پیر کے روز ماہرین نے کوچز کو نشترپارک سپورٹس کمپلیکس کے جمنیزیم ہال اور پنجاب سٹیڈیم میں عملی تربیت دی،بیڈ منٹن کے کوچز کولیجنڈکوچ لیاقت علی، ٹیبل ٹینس کے کوچز کو سینئر کوچ صبا وارث اور فٹ بال کے کوچز کو سینئر کوچ قاضی آصف نے عملی تربیت دی، ماہرین نے کوچز کو خود کھیل کر تربیت دی اور کھلاڑیوں کے کھیل کو بہتر بنانے کے حوالے سے بتایا، اس موقع پر سوال و جواب کے سیشن بھی ہوئے جس میں ماہرین نے کوچز کے سوالوں کے تفصیل سے جوابات دیئے، ماہرین کا کہنا تھا کہ کوچز کو ہر کھلاڑی کی کمزوریوں کا علم ہونا چاہئے، ان کی معمولی سے معمولی خامی کو بھی نظر انداز نہیں کرنا چاہئے اور ان خامیوں کو ختم کرانا کوچز کے فرائض میں شامل ہے، بیڈمنٹن کے لیجنڈ کوچ لیاقت علی کا کہنا تھا کہ بیڈ منٹن کے کھیل میں کھلاڑی کا فٹ ورک انتہائی اہمیت کا حامل ہوتا ہے۔

، اسے ایک لمحے میں آگے بڑھنا ہوتا ہے اور دوسرے لمحے میں پیچھے آنا ہوتا ہے اس لئے کوچ کو ہر کھلاڑی کے فٹ ورک کا خصوصی طور پر خیال رکھنا چاہئے، ٹیبل ٹینس کے سینئر کوچ صبا وارث نے کوچز کو ریکٹ کے استعمال کی تکنیک کے حوالے سے خود کھیل کر بتایا، اسی طرح فٹ بال کے سینئر کوچ قاضی آصف نے کوچز کو پنجاب سٹیڈیم میں عملی تربیت دی، کوچز کو جدید ٹیکنالوجی اور فٹ بال کے کھیل میں ہونیوالی نئی تبدیلیوں سے متعلق بھی آگاہ کیا گیا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی