پاکستانی خطاطوں کی بیرون ملک ترتیب کے امکانات پر غور ینگے، عامر حسن

پاکستانی خطاطوں کی بیرون ملک ترتیب کے امکانات پر غور ینگے، عامر حسن

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) بین الاقوامی خطاطی نمائش چار روز جاری رہنے کے بعد اس عزم کے ساتھ اختتام پزیر ہوگئی کہ خطاطی کے عظیم اسلامی ورثہ کو دنیا میں اسلام کا حقیقی اور روشن چہرہ دکھانے کے لئے فروغ دیا جائے۔ اسلامی کانفرنس تنظیم (اوآئی سی) کے ترکی میں قائم مرکز تحقیق برائے تاریخ، فنون وثقافت اسلامیہ (ارسیکا) اور قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن اس مقصد کے حصول کے لئے اشتراک عمل اور تعاون کو مزید وسعت دیں۔ پیر کو پاکستان نیشنل کونسل آف دی آرٹس (پی ۔این ۔سی ۔اے) میں بین الاقوامی خطاطی نمائش کی اختتامی تقریب منعقد ہوئی۔ وفاقی سیکریٹری قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن انجینئر عامر حسن نے نمائش میں حصہ لینے والے خطاطوں میں اسناد اور میڈل تقسیم کئے۔ ملک کے ممتازشاعر انور مسعود بھی تقریب میں شریک ہوئے ۔انجینئرعامرحسن نے نمائش میں شرکت کرنے والے برادراسلامی ممالک کے خطاطوں بالخصوص ترکی سے آنے والے وفد کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ چار دن کے دوران نمائش میں بڑی تعداد میں عوام نے شرکت کی۔ سیمینار ،مکالم اور آرٹ ورکشاپ سے ہمارے لئے فکروفن کے لئے نئے دروازے کھلے ہیں۔ دنیا کے نمائندہ خطاطوں کے ایک سو فن پاروں نے روحانی اور بصری تسکین فراہم کی۔ بہت سے لوگوں بالخصوص نوجوان بچوں اور بچیوں نے اس فن میں گہری دلچسپی لی اور سکیھنے کی خواہش کا اظہار کیا۔اس مقصد کے حصول کے لئے انسٹی ٹیوٹ آف کیلیگرافی قائم کیاجائے گا۔ مشیر وزیراعظم برائے قومی تاریخ وادبی ورثہ عرفان صدیقی کی سرپرستی میں علمی ،ادبی اور فنون لطیفہ کی ترقی کے لئے ہمارا ڈویژن تخلیقی جذبے سے کام کررہا ہے۔ پاکستانی خطاطوں کو بیرون ملک ترتیب کے مواقع کی فراہمی کے امکانات پر بھی غور کریں گے تاکہ ہمارے خطاط اپنی مہارتوں کو مزید بہتر بناسکیں۔ عامر حسن نے کہاکہ نمائش نے پوری دنیا کو بتایا کہ پاکستان ایک فن دوست، پُرامن اور وشن خیال ملک ہے۔نیشنل بُک فاؤنڈیشن (این۔بی۔ایف) کے مینجنگ ڈائریکٹر ڈاکٹر انعام الحق جاوید نے کہا کہ نمائش میں حصہ لینے والے خطاطوں کے فن پارے این بی ایف کی شائع کردہ اسلامی کتب کا حصہ بنائیں گے ۔تاکہ خطاطی کا ذوق عام ہو اور اسے بنانے والے فنکار کی بھی پزیرائی ہو۔ ممتاز شاعر انور مسعود نے اس موقع پر نمائش کے انعقاد کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہاکہ علم وادب اوراہل فن کی صلاحیتوں کے اظہار کے مواقع عام کرنا خوش آئند ہے۔ اس سے عوام کا ذوق وشوق بڑھانے میں بھی مدد ملے گی۔ قبل ازیں انہوں نے نمائش میں رکھے گئے فن پارے دیکھے اور ان کی تعریف کی۔ انہوں نے مہمانوں کی کتاب میں اپنے تاثرات بھی قلمبند کئے۔اس موقع پر قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن کے جوائنٹ سیکریٹریز کیپٹن (ر) عبدالمجید نیازی، سید جنید اخلاق کے علاوہ دیگر حکام بھی موجود تھے جبکہ نظامت کے فرائض عمار مسعود نے انجام دئیے ۔ دریں اثناء نمائش کے لئے آنے والے غیرملکی مہمان اپنے ممالک روانہ ہوگئے ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر