بین الاقوامی مرکز جامعہ کراچی اورمومینٹم میں معاہدہ پر دستخط

بین الاقوامی مرکز جامعہ کراچی اورمومینٹم میں معاہدہ پر دستخط

کراچی (اسٹاف رپورٹر) بین الاقوامی مرکز برائے کیمیائی و حیاتیاتی علوم (آئی سی سی بی ایس) جامعہ کراچی اورمومینٹم ٹیکنالوجی کانفرنس کے درمیان ایک مفاہمت کی یاد داشت پر دستخط ہوئے ہیں، اس معاہدے کا مقصد پاکستانی کاروباری تنظیم کاروں کو جدید ٹیکنالوجی کی اُس دنیا سے منسلک کرنا ہے جسکے وسیلے سے پاکستان میں معاشی ترقی کی رفتار تیز تر ہوسکتی ہے۔ آئی سی سی بی ایس جامعہ کراچی کے ترجمان کے مطابق معاہدے کے تحت مومینٹم ٹیکنالوجی کانفرنس 2018 ء میں ہونے والے اگلی کانفرنس میں بین الاقوامی مرکز کے متعلقین کو جگہ فراہم کرے گا جہاں پر ماہرین، معروف منتظمین، صنعتی ماہرین اور سینئر زسے استفادے کا موقع ملے گا۔ آئی سی سی بی ایس جامعہ کراچی کے ڈائریکٹر پروفیسر ڈاکٹرمحمد اقبال چوھدری جبکہ مومینٹم ٹیکنالوجی کانفرنس کے چیف ایگزیکٹوآفیسر سید عامر جعفری نے مفاہمت کی یاد داشت پر دستخط ڈاکٹر پنجوانی سینٹر فار مالیکولر میڈیسن اینڈ ڈرگ ریسرچ ، جامعہ کراچی میں گزشتہ ہفتے منعقدہ ایک اجلاس کے دوران کیے۔ اجلاس میں مومینٹم کے ہیڈ آف مارکیٹنگ حمزہ عون، پروجیکٹ مینجر انعم شکیل اور اسسٹنٹ کمیونیکیشن مینیجر محمد فیضان جبکہ آئی سی سی بی ایس جامعہ کراچی کی ڈاکٹر حنا صدیقی اور سید اظفر حسین بھی موجود تھے۔ اس موقع پرپروفیسر اقبال چوھدری نے جامعات اورصنعتوں کے درمیان تعلق اور تعاون پیدر کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں مطلوبہ ترقی کے لئے ٹیکنالوجی تنظیم کاری کی ضرورت ہے۔ انھوں نے کہا مومینٹم کا ایک اِنکیوبیشن پارٹنر کی حیثیت میں بین الاقوامی مرکز سے تعلق قائم ہوگیا ہے، بین الاقوامی مرکز کے اس سرگرمی سے ادارے کے نو آموز تنظیم کار، ریسرچ اسٹوڈنٹس اور فیکلٹی ایک ہی پلیٹ فارم پر متعدد اداروں کے نیٹ ورک سے فیضیاب ہونگے۔ عامر جعفری نے کہا مومینٹم ایک نمایاں ٹیکنالوجی کانفرنس ہے جس کا پہلا ایڈیشن 2017 ء میں معقد ہوا تھا اور اب دوسرا ایڈیشن 2018ء میں منعقد ہوگا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر