پاکستان نیوی سی پیک پر کاروباری برادری کو اعتماد میں لینے کیلئے آگہی پروگرام شروع کریگی

پاکستان نیوی سی پیک پر کاروباری برادری کو اعتماد میں لینے کیلئے آگہی پروگرام ...

  

لاہور(پ ر )چین پاکستان اقتصادی راہداری(سی پیک)علاقائی رابطے کا اہم فریم ورک ہے۔سی پیک سے نہ صرف چین پاکستان کو فائدہ ہو گا بلکہ ایران بھارت،وسطی ایشیاء اور خطے پر بھی مثبت اثرات پڑئے گئے۔سی پیک گلوبلائزڈ دنیا میں معاشی علاقائی کاری کی طرف ایک اہم سفر ہے، اس نے سب کیلئے امن،ترقی اور جیت کا ماڈل قائم کیا ہے۔ ون روڑ ون بیلٹ منصوبے میں پاکستان اہم پارٹنر ہے، چین پاکستان کا بڑا ٹریڈ پارٹنر ہے دونوں ممالک میں متوازن تجارتی حجم کی اشد ضرورت ہے۔سی پیک کا مقصد پاکستان اور چین کی عوام کی زندگیوں کو بہتر بنانے کیلئے دو طرفہ رابطے کو فروغ دینا،تعمیراتی کام،باہمی سرمایہ کاری،اکنامک اور ٹریڈ،لاجسٹکس کے ساتھ ساتھ علاقائی رابطے کیلئے لوگوں کا لوگوں تک رابطہ کروانا ہے۔ان خیالات کا اظہار فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی )کے نائب صدروریجنل چےئرمین چوہدری عرفان یوسف نے پاکستان نیوی کے کموڈور نعمت اللہ سے سٹیشن ہیڈ کوارٹر (نیوی)پی این ایس پنجاب لاہور میں خصوصی ملاقات کے موقع پر کیا۔ پاکستان نیوی کے کموڈور نعمت اللہ نے سی پیک میں پاکستان نیوی کے کردار کے بارے میں بریفنگ دی اور کہا کہ پاکستان نیوی سی پیک بارے آگاہی پروگرام شروع کر رہی ہے جس میں کاروباری برادری کو بھی اعتماد میں لیا جائے گا۔ سی پیک پاکستان کے لئے گیم چینجر ثابت ہو گا اور جلد ہی ملک میں خوشحالی آئے گی اور بے روزگاری ختم ہو جائے گی۔عرفان یوسف نے مزید کہاکہ ون روڑ ون بیلٹ منصوبے میں پاکستان اہم پارٹنر ہے، چین پاکستان کا بڑا ٹریڈ پارٹنر ہے دونوں ممالک میں متوازن تجارتی حجم کی اشد ضرورت ہے،پاکستان کی چین سے امپورٹ بڑھتی جار ہی ہے اور ایکسپورٹ کم ہو رہی ہے۔ انہوں نے مزیدکہا کہ دونوں ممالک کے درمیان امن، بھائی چارہ اور تجارت بہت وسیع ہے ۔ سی پیک جیسا میگا پروجیکٹ جس کی بہترین مثال ہے۔ پاکستان چین کو بہت سی مصنوعا ت ایکسپورٹ کرتا ہے جن میں چمڑا، چمڑے کی مصنو عات، خام اون،سوتی کپڑا، کپڑے کی دیگرمصنوعات ، چینی، مچھلی،راب، خام کرومیم کے علاوہ پٹرولیم اور پٹرولیم کی مصنوعات شامل ہیں۔

مزید :

کامرس -