شنگھائی رینکنگ جاری، کامسیٹس یونیورسٹی ملک کی اول نمبرجامعہ قرار

شنگھائی رینکنگ جاری، کامسیٹس یونیورسٹی ملک کی اول نمبرجامعہ قرار

  

اسلام آباد ( پ ر)کامسیٹس یونیورسٹی اسلام آبادماضی قریب میں اپ گریڈ ہونیوالی منسٹری آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے ماتحت پبلک سیکٹر یونیورسٹی ہے ،جسے اکیڈمک رینکنگ آف ورلڈ یونیورسٹیز شنگھائی رینکنگ کی جانب سے پاکستان میں اول درجے پر جبکہ دنیا بھر میں 601-700 یونیورسٹیوں میں شمار کیا گیا۔اس رینکنگ میں پاکستان کی مزید 4جامعات یعنی قائداعظم یونیورسٹی 701-800، یو نیو ر سٹی آف پنجاب 801-900اور آغا خان یونیورسٹی 901-100بینڈ کیساتھ پاکستان میں بتدریج دوسرے ،تیسرے اور چوتھے نمبر پر ہیں ۔ اس رینکنگ کے مطابق دنیا کی ٹاپ1000یونیورسٹیز میں پاکستان کی صرف چار یونیورسٹیز ہیں۔ شنگھائی رینکنگز کے مطابق دوسر ی تمام وجوہات کیساتھ ساتھ سال 2017میں2000کے امپیکٹ فیکٹر پبلیکیشنز کے ساتھ کامسیٹس یونیورسٹی کی جانب سے پچھلے کچھ عر صے میں 54پیٹینٹ فِل کیے گئے۔ اتنے بہترین بینڈ کے ساتھ یہ پاکستان کی پہلی یونیورسٹی ہے۔ ریکٹر سی یو آئی پروفیسر ڈاکٹر راحیل قمر نے مبارکباد کے پیغام میں فیکلٹی ،سٹاف ، طلبہ بلکہ ہر مکتبہ فکر کے لوگوں کو پاکستان میں تعلیمی ترقی میں اپنا اپنا کردار ادا کرنے کی تلقین کی۔ انہوں نے مزید کامسیٹس یونیورسٹی کی کمیونٹی بلڈنگ اور انوائرنمنٹ پروٹیکشن کے حوالے سے کیے گئے اقدامات کو بھی سراہا۔ مزید براں ، تمام ممبران کو دیا میر بھاشا ڈیم کے حوالے سے حکومت کی امداد کے لیے بھی کہا۔ شنگھائی رینکنگ کنسلٹنسی ایک مکمل طور پر آزاد ادارہ ہے جو اعلیٰ تعلیم کی ریسرچ کے لیے وقف ہے۔ یہ ادارہ2009سے اکیڈمک رینکنگ آف ورلڈ یونیورسٹیز (ARWU) کا آفیشل پبلشر ہے۔

کامسیٹس یونیورسٹی

مزید :

صفحہ آخر -