عوامی رکشہ یونین کا ایل پی جی مافیا کیخلاف اعلان جنگ

عوامی رکشہ یونین کا ایل پی جی مافیا کیخلاف اعلان جنگ

  

 لاہور (خبرنگار) عوامی رکشہ یونین نے ایل پی جی مافیا کے خلاف اعلان جنگ کرتے ہوئے رکشے نذر آتش کرنے کا سلسلہ شروع کردیا ہے اس سلسلے میں عوامی رکشہ یونین کے کارکنوں نے شہر کے مختلف مقامات پر احتجاجی مظاہروں کے دوران رکشے نذر آتش کر کے شہر کے داخلی خارجی راستے بند کر دیئے جس کی وجہ سے ٹریفک کا نظام درہم بھرم ہوگیا اور گاڑیوں کی لمبی لائنیں لگ گئیں جبکہ پولیس خاموش تماشائی بنی رہی۔عوامی رکشہ یونین کے کارکنوں نے چیئرمین مجید غوری کی کال پر پہلے بابو صابو انٹر چینج چو ک میں رکشہ نذر آتش کیا اور سڑکوں پرگاڑیوں کے سامنے لیٹ کر ٹریفک جام کر دی اور ایل پی جی مافیا اور انتظامیہ کی ہٹ دھرمی کے خلاف نعرے بازی کر تے رہے ۔ اس کے بعد عوامی رکشہ یونین کی دوسری ٹیم نے ٹھوکر نیاز بیگ چوک میں بھی رکشہ نذر آتش کیا اور نعرے بازی کرتے رہے اس حتجاجی مظاہرے کی قیادت عوامی رکشہ یونین کے چیئرمین مجید غوری نے خود کی ۔اس احتجاجی مظاہرے میں شریک سینکڑوں کارکنوں نے ٹریفک کو چاروں طرف سے بند کر دیا جس کی وجہ سے ٹھوکر نیاز بیگ چوک میں کاروبار زندگی مکمل طورپر بند رہا ۔اس موقع پر مجید غوری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایل پی جی مافیا نے ظلم کی انتہا کر دی ہے ایل پی جی کی قیمتوں میں 120روپے پر کلوکا خود ساختہ اضافہ کر کے نا صرف رکشہ ڈرائیوروں کی زندگی اجیرن کر دی ہے بلکہ گھریلو صارفین کے بجٹ کو تباہ کر کے رکھ دیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ دس روز سے ہم پرامن احتجاج کر رہے ہیں لیکن نہ تو انتظامیہ نے کوئی نوٹس لیا اور نہ ہی ملک میں کوئی حکومت نام کی چیز نظر آئی ۔ایل پی جی مافیا نے انتظامیہ کی بے حسی اور غفلت کا فائدہ اٹھاتے ہوئے 70روپے سیل ہونے والی ایل پی جی کی قیمت میں خود ساختہ اضافہ کر کے 185روپے کر دی ہے ۔جو سراسر ظلم ہے اس کے خلاف ہم آواز بلند کرتے رہے ہیں گے اور اب بھی ہمارے مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو میٹرو بس کے ٹریک پر بھی رکشے نذر آتش کر کے ٹریک اور شہر کے انڈر پاسز رکشے لگا کر بند کر دیں گے۔ مجید غوری نے وزیر اعظم پاکستان اور چیف جسٹس آف پاکستان سے ایل پی جی مافیا کے خلاف سخت قانونی کاروائی کی اپیل کی ہے۔

رکشہ یونین؍ احتجاج

مزید :

صفحہ آخر -