مافیا پھر متحرک مک مکا کے بعد درخواستیں غائب ، ریکوری مہم ٹھپ

مافیا پھر متحرک مک مکا کے بعد درخواستیں غائب ، ریکوری مہم ٹھپ

  

بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)اینٹی کرپشن بہاولپور کی مزید کارستانی منظرعام پرآناشروع ہوگئی محکمہ تعلیم اورضلعی دفترخزانہ کے افسران کی ملی بھگت کے باعث خزانہ سرکار کو19 کروڑ روپے کانقصان پہنچانے والے ملازمین کیخلاف اینٹی کرپشن کی کارروائیٹھپ ہوگئی۔علامہ اقبال ٹاؤن کے2(بقیہ نمبر38صفحہ12پر )

کروڑ بقایاجات کی کارروائی سردخانے کی نذر کردی گئی۔ تفصیل کیمطابق ضلعی دفترخزانہ بہاولنگر اورمحکمہ تعلیم کے افسران نے ملی بھگت کرکے ملازمین کی جعلی تقرریاں کرکے ان کے ناموں پرجعلی تنخواہوں پرالاؤنسز بقایاجات اورایڈجسمنٹس کے نام پرخزانہ سرکار کو19 کروڑ روپے کاجھٹکالگایاتھاجس کی تحریری درخواست اینٹی کرپشن میں دی گئی تھی ‘اس کے علاوہ علامہ اقبال ٹاؤن بہاولپورکے مالکان نے مبینہ طورپر2کروڑ روپے سرکاری واجبات اداکیے بغیر پلاٹوں کی خریدوفروخت کاکام شروع کررکھاہے‘ اس پربھی مقامی شہری نے ڈائریکٹر اینٹی کرپشن کوتحریری طورپرآگاہ کیاتھالیکن اینٹی کرپشن بہاولپورمیں موجود مافیانے دونوں درخواستوں کی کاروائیاں بھاری مک مکاکے بعدسردخانے کی نذرکررکھی تھیں جس پرنیب نے فوری کارروائی کرتے ہوئے ضلعی دفترخزانہ اور محکمہ تعلیم بہاولنگر سیکنڈل میں ملوث12 افسران سینئرآڈیٹر دفترخزانہ جاویداختر مقصوداحمد ،محمدمختار اورفیاض احمدساجد اکاؤنٹس آفیسر اظہر اقبال عبدالستار فاروقی، ندیم احمد، اکاؤنٹس آ فیسر حسن محمود، غلام یاسین بھٹی ، محمداقبال انجم، پنچ آفیسرز، نصراللہ اورمحمدیاسین کوگرفتار کرکے ریکوریوں کاسلسلہ شروع کررکھاہے اس طرح علامہ اقبال ٹاؤن کے مالکان کیخلاف بھی کارروائی کرتے ہوئے تقریباً2 کروڑ روپے کی ریکوری کی تھی۔ اس کے برعکس اینٹی کرپشن بہاولپورکی دونوں کارروائیاں صفرثابت ہوئی ہیں ۔ذرائع نے بتایاہے کہ اینٹی کرپشن بہاولپورکے افسران نے اربوں روپے کے میگاپراجیکٹس کی کاروائیاں بھی بھاری مک مکا کے باعث ٹھنڈی کردی ہیں ۔نیب سے اینٹی کرپشن کاتمام ریکارڈ حاصل کرکے کاروائی کرنے کامطالبہ کیاگیاہے۔ اس سلسلہ میں ڈائریکٹر اینٹی کرپشن سے رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی لیکن انہوں نے کسی قسم کی تصدیق یاتردیدکرنے سے انکارکردیا ہے۔

اینٹی کرپشن بہاولپور

مزید :

ملتان صفحہ آخر -