شیخ رشید کے احکامات نظرانداز، 5روز گزر گئے 3افسر معطل نہ ہوئے، 2کا تبادلہ

شیخ رشید کے احکامات نظرانداز، 5روز گزر گئے 3افسر معطل نہ ہوئے، 2کا تبادلہ
شیخ رشید کے احکامات نظرانداز، 5روز گزر گئے 3افسر معطل نہ ہوئے، 2کا تبادلہ

  

لاہور (ویب ڈیسک) ریلوے بیور وکریسی نے شیخ رشید کو مکمل طور پر بے بس کر دیا شیخ رشید کی جانب سے دئیے، روزنامہ نوائے وقت کے مطابق احکامات کو نظر انداز کرنے کا سلسلہ جاری ہے جبکہ شیخ رشید کو ٹف ٹائم دینے کے لئے مستقبل کی منصوبہ بندی بھی جاری ہے ایک جانب جہاں کمرشل ٹریفک کے ایک آفیسر کی جانب سے شیخ رشید کو ”شٹ اپ“ کہنے کا تنازعہ سامنے آیا وہیں 5روز قبل وفاقی وزیر ریلوے کی جانب سے جن 3افسران کو معطل کرنے کا دعویٰ کیا گیا تھا5 روز گزرنے کے بعد ان میں سے کسی کو معطل نہیں کیا گیا۔

معطل کرنے کی بجائے ان میں سے 2افسران کا تبادلہ کر دیا گیا وفاقی وزیر شیخ رشید کی جانب سے ان افسران کو نالائق اور غیر ذمہ دار کہا گیا تھا اور دیگر افسران کیخلاف بھی بھرپور کارروائی کا ارادہ کیا گیا تھا معلوم ہو اہے وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کے چارج سنھبالتے ہی ان کی ریلوے افسران سے سرد جنگ جاری ہے جس میں ہر گزرتے دن کے ساتھ اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔

وزیر ریلوے کی جانب سے گذشتہ ہفتہ پریس کانفرنس کے دوران گریڈ 19کے آفیسر ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ فریٹ کاشف یوسفانی ، گریڈ 18کے آفیسر ڈویثرنل منیجر محمد شہباز اقبال ملک اورڈپٹی چیف کنٹرولر کو معطل کرنے کا دعویٰ کیا گیا شیخ رشید کاکہنا تھا مزید نالائق اور غیر ذمہ دار افسروں کیخلاف کارروائی کریں گے پریس کانفرنس میں سی او ریلوے آفتاب اکبر اور چیئرمین ریلوے جاوید انور بوبک بھی موجود تھے جو وزیر ریلوے کے 3افسران کو معطل کرنے کے دعویٰ پر5روز خاموش رہے اور گذشتہ روز ان میں سے2 افسران کاشف یوسفانی اور شہباز اقبال ملک کا تبادلہ کر دیا گیا ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -