روس نے اپنی سب سے بڑی فوج عرب ملک کی جانب روانہ کردی، خطرناک خبر آگئی، تیسری عالمی جنگ کا شدید ترین خطرہ کیونکہ۔۔۔

روس نے اپنی سب سے بڑی فوج عرب ملک کی جانب روانہ کردی، خطرناک خبر آگئی، تیسری ...
روس نے اپنی سب سے بڑی فوج عرب ملک کی جانب روانہ کردی، خطرناک خبر آگئی، تیسری عالمی جنگ کا شدید ترین خطرہ کیونکہ۔۔۔

  

دمشق(مانیٹرنگ ڈیسک) شام کئی سالوں سے عالمی طاقتوں کی پنجہ آزمائی کا تختہ مشق بنا ہوا ہے اور کئی بار ایسے مواقع آئے ہیں کہ امریکہ و روس سمیت دیگر ممالک کی افواج کا آمنا سامنا ہوا اور دنیا تیسری عالمی جنگ کے خطرے سے بال بال بچی۔ اب ایک بار پھر روس نے ایسا کام کر دیا ہے کہ تباہ کن عالمی جنگ کا خطرہ پھر سے دنیا کے سر پر منڈلانے لگا ہے۔ نیوز ویک کے مطابق روس نے اب شام میں امریکہ کے ممکنہ فوجی حملے کے پیش نظر بڑی تعداد میں اپنی فوج اور 10جنگی بحری بیڑے شام کی طرف روانہ کر دیئے ہیں، جن میں پائتلیوے اور نیکولائی فیلچینکوف نامی بڑے جنگی بیڑے بھی شامل ہیں۔ یہ بیڑے آبنائے باسفورس میں ترکی کے پہنچ چکے ہیں اور آگے جزائرغرب الہند کی طرف جا رہے ہیں۔ان میں سے زیادہ تر جنگی بیڑے کیلیبر کروز میزائلوں سے لیس ہیں۔ اس کے علاوہ روس نے مشرقی جزائرغرب الہند کی طرف دو آبدوزیں بھی روانہ کر دی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق یہ اب تک کی روسی فوج کی سب سے بڑی تعداد ہے جو مشرق وسطیٰ کی طرف روانہ کی گئی ہے۔ امریکہ کی طرف سے شام کی حکومتی افواج پر کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کا الزام عائد کرنے کے بعد سے خطے میں اپنی فوجی طاقت بڑھائی جا رہی ہے اورایک سے زائد بار امریکی فوج شامی افواج کے ٹھکانوں پر بمباری بھی کر چکی ہے۔ روسی فوج چونکہ شام کے صدر بشارالاسد کی حکومتی فوج کی اتحادی ہے چنانچہ اس معاملے پر روس اور امریکہ کے مابین کافی کشیدگی پائی جا رہی ہے، اور اب صورتحال مزید سنگین ہوتی نظر آ رہی ہے۔امریکی نیشنل سکیورٹی ایڈوائزر جان بولٹن نے گزشتہ دنوں دعویٰ کیا ہے کہ بشارالاسد، جو روس اور ایران کے اتحادی ہیں، شام کے صوبے ادلیب پر قبضہ کرنے کے لیے وہاں کیمیائی ہتھیار استعمال کرنے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔ اگر یہ درست ثابت ہوا تو امریکہ کی طرف سے سخت ردعمل سامنے آئے گا۔

مزید :

بین الاقوامی -