1965کی جنگ کے ہیروسپاہی مقبول حسین فوجی اعزاز کے ساتھ سپردِ خاک، نماز جنازہ میں آرمی چیف کی شرکت

1965کی جنگ کے ہیروسپاہی مقبول حسین فوجی اعزاز کے ساتھ سپردِ خاک، نماز جنازہ ...
1965کی جنگ کے ہیروسپاہی مقبول حسین فوجی اعزاز کے ساتھ سپردِ خاک، نماز جنازہ میں آرمی چیف کی شرکت

  

راولپنڈی(ویب ڈیسک) سپاہی مقبول حسین کو پورے فوجی اعزاز کے ساتھ سپرد خاک کر دیا گیا، 1965 کی جنگ کے ہیرو سپاہی مقبول کی نماز جنازہ چکلالہ گیریژن میں ادا کی گئی ہے جس میں پاک فوج کے سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ، فوجی افسران اور جوانوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

اس کے بعدسپاہی مقبول حسین کی نمازِ جنازہ نیریاں ضلع سدھنوتی میں ادا کی گئی۔ نمازِ جنازہ میں صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان جی او سی مری، کمانڈر اے کے سنٹر مانسر سمیت ہزاروں لوگوں نے شرکت کی۔مرحوم کو آبائی گاوں مرشد آباد میں پورے فوجی اعزاز کے ساتھ سپرد خاک کر دیا گیا۔ اس موقع پر آرمی چیف قمر جاوید باجوہ کی طرف سے پھولوں کی چادر چڑھائی گی جبکہ فوجی دستے نے سلامی دی۔

1965کی جنگ کے غازی اور کئی سالوں تک بھارتی قید میں صعوبتیں برداشت کرنے والے پاک فوج کے سپاہی مقبول حسین گزشہ روز اس دارِ فانی سے رخصت فرما کر اپنے خالقِ حقیقی سے جا ملے تھے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے سپاہی مقبول حسین کی رحلت پر ان کے اہلخانہ سے دلی ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کیا۔

واضح رہے کہ سپاہی مقبول حسین نے 1965کی جنگ میں حصہ لیا، انھیں اسی سال بھارت نے جنگی قیدی بنا کر گرفتار کر لیا تھا۔ سپاہی مقبول حسین 40 سال تک ہندوستانی قید کی صعوبتیں برداشت کرنے کے بعد 2005میں رہا ہوئے تھے۔سپاہی مقبول حسین کا انتقال سی ایم ایچ اٹک میں ہوا ہے جہاں وہ زیر علاج تھے۔ وطن عزیز کی خاطر قربانیوں کے صلے میں انھیں ستارہ جرات سے نوازا گیا تھا۔زندہ قومیں اسی طرح اپنے شہیدوں کا غازیوں کا احترام کرتی ہیں۔

مزید : اہم خبریں /قومی