”پیپلز پارٹی اگر ایک جمہوری جماعت ۔۔۔“ن لیگی رہنما طارق فضل نے پی پی پی کی پارلیمانی حیثیت پر سوالات اٹھادیئے

”پیپلز پارٹی اگر ایک جمہوری جماعت ۔۔۔“ن لیگی رہنما طارق فضل نے پی پی پی کی ...
”پیپلز پارٹی اگر ایک جمہوری جماعت ۔۔۔“ن لیگی رہنما طارق فضل نے پی پی پی کی پارلیمانی حیثیت پر سوالات اٹھادیئے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)مسلم لیگ ن کے رہنما طارق فضل نے کہاہے کہ پیپلز پارٹی اگر ایک جمہوری جماعت ہوتی اور پالیمانی تقاضوں کو سمجھ رہی ہوتی تو صدر کیلئے اپنے امیدوار کا نام اپوزیشن کے مشترکہ اجلاس میں لیکر آتی، گھر بیٹھ کر اعتزاز احسن کے نام کا اعلان نہ کرتی۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”آن دا فرنٹ “ میں گفتگو کرتے ہوئے طارق فضل نے کہا کہ صدارتی انتخاب کے حوالے سے متحدہ اپوزیشن کا موقف ایک تھا ۔ اب اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ مسلم لیگ ن گھر میں بیٹھ کر ایک امیدوار کا اعلان کرے اور دوسری پارٹیوں سے اصرار کرے کہ ہمارے اس امیدوار کو ووٹ دیا جائے ۔ یہ طریقہ کار غلط ہے اور پیپلز پارٹی نے گھر بیٹھ کر اعزاز احسن کے نام کا اعلان کیا اور پھر کہا ان کو ووٹ دیئے جائیں۔ پیپلزپارٹی اگر ایک جمہوری جماعت ہے اور وہ پارلیمانی تقاضوں کو سمجھ رہی ہوتی تو وہ اپنے امیدوار کا نام اپوزیشن کے مشترکہ اجلاس میں لیکر آتی ۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن ایشوز پر اکٹھی ہے اور ہم امیدکرتے ہیں کہ اپوزیشن متحدرہے گی ۔ نوازشریف کی جانب سے ہم کو پیپلزپارٹی سے تعلق ختم کرنے کی کوئی ہدایت نہیں دی گئی ۔ اس وقت اپوزیشن کے مشترکہ امیدوار مولانا فضل الرحمن ہیں۔ اب دیکھتے ہیں کہ وہ پیپلز پارٹی کوبھی قائل کر سکتے ہیں یا نہیں۔

مزید :

قومی -