غزہ کے عوام پر پابندیاں تاریخ کا بدترین ظلم ہے: خطیب مسجد اقصیٰ 

غزہ کے عوام پر پابندیاں تاریخ کا بدترین ظلم ہے: خطیب مسجد اقصیٰ 
غزہ کے عوام پر پابندیاں تاریخ کا بدترین ظلم ہے: خطیب مسجد اقصیٰ 

  

مقبوضہ بیت المقدس (صباح نیوز)مسجد اقصیٰ کے امام اور خطیب الشیخ عکرمہ صبری نے کہا ہے کہ غزہ کے محصور عوام کا مفاد جنگ بندی کو عمل شکل دینے، خون خرابہ روکنے، محاصرہ اٹھانے اور عوام پر عائد کردہ پابندیاں مکمل طور غیر مشروط طور پر ختم کرنے میں ہے،غزہ کے عوام پر پابندیاں تاریخ کا بدترین ظلم ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کو ایک انٹرویو میں الشیخ عکرمہ صبری نے کہا کہ غزہ کی پٹی کے عوام پرعائد کردہ پابندیاں فوری اٹھانے کی ضرورت ہے۔ کسی ایک گروپ کی وجہ سے غزہ کے عوام اور پوری فلسطینی قوم کو سزا دینے کا کوئی جواز نہیں۔انہوں نے کہا کہ فلسطینی اتھارٹی کی طرف سے غزہ کی پٹی پر پابندیاں قومی مفاہمت کی پالیسی کے متضاد ہیں۔ جو مصالحت چاہتے ہیں وہ غزہ کے عوام پر عائد کردہ پابندیاں فوری اٹھائیں اور غزہ کے عوام کو آزاد کرائیں۔ انہوں نے کہاکہ دین اسلام ہمیں کسی انسان کوبے قصور ہونے پر اسے سزا دینا نہیں سکھاتا۔ غزہ کے عوام پر پابندیاں المناک اور تاریخ کا بدترین ظلم ہے۔ ہمیں عوام کے کسی طبقے کو ظلم،خطرات اور پابندیوں میں مبتلاا نہیں کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ فلسطینی جماعتیں بات چیت کے لیے ایک دوسرے کے قریب اور باہمی اعتماد اور اعتبار حاصل کرسکتی ہیں۔ تمام فلسطینیوں کو مل جل کر قوم کے مسائل کے حل کی کوششیں کرنی چاہئیں۔

مزید :

بین الاقوامی -