پیسوں کا لالچ‘ سوتیلی ماں نے 10 سالہ بچی کا نکاح 26 سالہ نوجوان سے کرا دیا‘ کارروائی کا مطالبہ

پیسوں کا لالچ‘ سوتیلی ماں نے 10 سالہ بچی کا نکاح 26 سالہ نوجوان سے کرا دیا‘ ...

  

صادق۱ آباد(تحصیل رپورٹر)پیسے کا لالچ اور دوسری بیوی کا حکم سر آنکھوں پر،سوتیلی ماں نے 10سالہ رخسانہ کا نکاح(بقیہ نمبر12صفحہ6پر)

 26سالہ مجاہد سے کروادیا،ملزمان کے خلاف کارروائی کی جائے،لڑکی کے بھائی صفدر کی پریس کلب میں دہائی،تفصیل کے مطابق گزشتہ روز بستی مورن کے رہائشی صفدر نے پریس کلب میں صحافیوں کو بتایا کہ اس کے والد نے اس کی 10سالہ بہن رخسانہ کا نکاح پیسے لے کر اور دوسری بیوی کے کہنے پر 26سالہ مجاہد سے کروادیا ہے جو کہ ظلم ہے نکاح بستی مورن کے مولوی عبدالصمد نے پڑھوایا ہے جس میں گواہ محمد وارث،عاشق،جمہ خان،ذکر حسین کو رکھا گیا ہے،صفدر نے مزید کہا کہ اس کا باپ اپنی دوسری بیوی کے کہنے اور پیسے کی حوس میں اس قدر گر چکا ہے کہ اس نے اپنی سگی بیٹی کا زبردستی نکاح 26سالہ مجاہد سے کردیا جو کہ ظلم ہے۔نکاح کو روکنے پر مجھے 26سالہ مجاہد اس کے والد دودھا خان اور سوتیلی ماں تسلیم بی بی کی طرف سے قتل کی دھمکیاں دی جارہی ہے اور چپ رہنے پر مجبور کیا جارہا ہے میری وزیر اعظم پاکستان،وزیرا علی پنجاب،آئی جی پنجاب،ڈی آئی جی بہاولپور،ڈی پی او رحیم یارخان،ڈی ایس پی سرکل پولیس صادق آباد،ایس ایچ او تھانہ صدر صادق آباد سے اپیل ہے کہ ملزمان کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے انہیں قرار واقعی سزا دی جائے اور میری بہن کو اس ظلم سے بچانے کے ساتھ ساتھ ہمیں تحفظ فراہم کیا جائے۔

نکاح

مزید :

ملتان صفحہ آخر -