نوشہرہ، پیر پیائی کے عوام ٹرانسفارمرکی خرابی پر سڑکوں پر نکل آئے 

نوشہرہ، پیر پیائی کے عوام ٹرانسفارمرکی خرابی پر سڑکوں پر نکل آئے 

  

نوشہرہ  (بیورورپورٹ)نوشہرہ، پیرپیائی کے عوام ٹرانسفامر خرابی 10سال سے بند ٹیوب ویل اور گیس پائپ لائن پر کام شروع نہ کرنے پر سڑکوں پر آگئے عمائدین پیرپیائی کا ممبر قومی اسمبلی داکٹر عمران خٹک کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ٹرانسفامر کی عدم تبدیلی اور ٹیوب ویل چالو نہ کرنے کی صورت میں جی ٹی روڈ بلاک کرنے کی دھمکی نوشہرہ کے علاقہ پیرپیائی بیلہ کورونہ کے عوام نے گذشتہ روز ممبر قومی اسمبلی ڈاکٹر عمران خٹک کے خلاف اپنے گاوں میں علامتی احتجاجی مظاہرہ کیا، اور جلوس نکالا اس موقع پر عمائدین علاقہ نے ایم این اے ڈاکٹر عمران خٹک کے خلاف نعروں پر مشتمل فلیکس اٹھا رکھے تھے، مظاہرے سے نائب امیر جماعت اسلامی راشد انور سمیت دیگر نے خطاب کیا، انہوں نے کہا کہ ہمارے علاقے میں دس سال سے ٹیوب ویل تعمیر کیا گیا ہے لیکن یہاں کے عوام اس ٹیوب ویل سے پانی نینے سے محروم ہیں ٹیوب ویل بنے سے ٹھیکیدار کا کام تو ہو گیا اور اسی ٹھیکیدار نے بل بھی وصول کر دیا کیونکہ موجودہ ایم این ایز اور ایم پی ایز کا صرف ٹھیکیداروں کو نوازنا ہو تا ہے، جبکہ عوام ایک قطرہ پانی بھی نہیں ملا اسی طرح یہاں ٹرانسفارمر ہر وقت آور لوڈ ہونے کی وجہ سے خراب رہتا ہے اور اب بھی گذشتہ کئی روز سے خراب پڑا ہوا ہے جس کی وجہ سے اس علاقے کے عوام شدید مشکلات سے دو چار ہیں ممبر قومی اسمبلی ڈاکٹر عمران خٹک کو کئی بار درخواستیں دیں لیکن ابھی تک کام نہیں ہوا انہوں نے مزید کہا کہ اسی طرح لاکھوں روپے کے گیس پائپ لائن یہاں پر بچھائے گئے ہیں لیکن ان پائپوں سے جانوروں کو باندھنے کاکام لیا جا رہا ہے علاقے میں گیس نہ ہونے کی وجہ سے اس دور جدید میں بھی ہم گوبر کے ابلوں سے ایندھن کا کام لے رہے ہیں انہوں نے کہا کہ اگر ہمارے تین بنیادی ضروریات و مطالبات جیسے اہم مسائل حل نہ ہوئے تو ہم جی ٹی روڈ  پر آنے پر مجبور ہوجائیں گے جس کی تمام تر ذمہ داری ایم این اے پر عائد ہوگی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -