دنیا کے سب سے بڑے اسلامی ملک میں سائنسدانوں نے مچھروں کو ٹیکے لگا کر ڈینگی کا پھیلاﺅ روک لیا

دنیا کے سب سے بڑے اسلامی ملک میں سائنسدانوں نے مچھروں کو ٹیکے لگا کر ڈینگی کا ...
دنیا کے سب سے بڑے اسلامی ملک میں سائنسدانوں نے مچھروں کو ٹیکے لگا کر ڈینگی کا پھیلاﺅ روک لیا

  

جکارتہ(مانیٹرنگ ڈیسک) بدبخت مچھر انسانوں کو ٹیکہ لگا کر ان میں ڈینگی وائرس منتقل کرتے تھے لیکن جیسے کو تیسا کے مصداق انڈونیشیاءمیں ماہرین نے مچھروں کو ٹیکے لگا کر ان میں ایسے بیکٹیریا داخل کر دیئے ہیں کہ ملک میں ڈینگی کا پھیلاﺅ رک گیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق انڈونیشیاءکے شہر یوگیاکارتا میں واقع یونیورسٹی آف گیڈجامیڈا کے سائنسدانوں نے مچھروں میں ’Wolbachia‘ نامی بیکٹیریا داخل کیا جس نے مچھروں کی انسانوں میں ڈینگی وائرس منتقل کرنے کی صلاحیت ختم کر دی۔ 

رپورٹ کے مطابق ملک کے جن علاقوں میں مچھروں کو یہ ٹیکے لگائے گئے، ان علاقوں میں ڈینگی ہی نہیں بلکہ مچھروں سے پھیلنے والی تمام بیماریوں کے پھیلاﺅ کی شرح میں 77فیصد سے زائد کمی واقع ہو گئی ہے۔تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ ایدی اوتارینی کا کہنا تھا کہ ”یہ ایک بریک تھرو ہے۔ ہماری تحقیق سے جس قدر حوصلہ افزاءنتائج سامنے آئے ہیں، اس سے ڈینگی اور مچھروں سے پھیلنے والی تمام بیماریوں کے مکمل خاتمے کی ایک امید پیدا ہوگئی ہے۔“واضح رہے کہ سائنسدانوں نے تین سال کا عرصہ لگا کر مچھروں کو یہ ٹیکے لگائے ہیں، جنہیں بعد ازاں جکارتہ سمیت دیگر کئی شہروں کے مخصوص علاقوں میں چھوڑاگیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -