ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کے لیے کالاباغ ڈیم تعمیر کرنا ہوگا

ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کے لیے کالاباغ ڈیم تعمیر کرنا ہوگا

لاہور (وقائع نگار) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے کالاباغ ڈیم کو ملک کے لیے ناگزیر قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ غربت، بھوک و افلاس سے بچنے اور ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کے لیے کالاباغ ڈیم تعمیر کرنا ہی ہوگا۔ اس سے نہ صرف ڈیڑھ روپے فی کلوواٹ کی لاگت پر بجلی پیدا کی جاسکے گی جس سے سالانہ تین سو ارب روپے کی بچت ہوگی۔ اس کے علاوہ آئل امپورٹ بل کم ہوگا، زرمبادلہ کے ذخائر بڑھیں گے اور روپے کی قدر مستحکم ہوگی۔ ان خیالات کا اظہار لاہور چیمبر کے صدر انجینئر سہیل لاشاری نے لاہور چیمبر میں کالاباغ ڈیم پر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا جس کا اہتمام لاہور چیمبر اور سندھ طاس واٹر کونسل نے مشترکہ طور پر کیا تھا۔ لاہور چیمبر کے نائب صدر کاشف انور، چیئرمین سندھ طاس واٹر کونسل محمد سلیمان خان، خیبر پختونخوا کے ایڈووکیٹ نثار صفدر، کرنل عبدالرزاق بگتی، انجینئر سعید اقبال بھٹی، چیئرمین تحریک کالاباغ ڈیم میجر صدیق ریحان اور انجینئر ملک محمد طفیل نے بھی اس موقع پر خطاب کیا۔ انجینئر سہیل لاشاری نے کہا کہ ڈیم سے لوڈشیڈنگ کے خاتمے میں مدد ملے گی جبکہ صنعتی پیداوار میں سالانہ پانچ سے چھ ارب ڈالر اضافہ ہوگا۔ اس سے زرعی شعبے کی ویلیوایڈیشن بھی سالانہ دس ارب ڈالر بڑھ جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ کالاباغ ڈیم سے نوشہرہ کو کوئی خطرہ نہیں کیونکہ یہ ڈیم سے 150فٹ بلند ہے۔ اس ڈیم سے صرف پنجاب کو نہیں بلکہ تمام صوبوں کو یکساں فائدہ ہوگا۔ لاہو رچیمبر کے صدر نے کہا کہ کالاباغ ڈیم کی مدد سے خیبرپختونخوا کی آٹھ لاکھ ایکڑ سے زائد وہ زمین بھی سیراب کی جاسکے گی جو دریا کی سطح سے 100تا 150فٹ بلند ہے۔ اسے صرف کالاباغ ڈیم کے ذریعے ہی پانی مہیا کرنا ممکن ہے۔ دوسرا ذریعہ پانی پمپ کرکے اوپر پہنچانا ہے جس پر پانچ ہزار روپے فی ایکڑ لاگت آئے گی جو کالاباغ ڈیم کی تعمیر کے بعد صرف چار سو روپے فی ایکڑ رہ جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ کالاباغ ڈیم کے معاملے پر تمام سٹیک ہولڈرز کو ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا چاہیے کیونکہ ہر سال 30ملین ایکڑ فٹ پانی سمندر میں گر کر ضائع ہوجاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کالاباغ ڈیم کی مدد سے سیلابوں پر بھی قابو پایا جاسکے گا جن کی وجہ سے حال ہی میں ملک کو پینتالیس ارب ڈالر کا نقصان ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مہنگے تیل سے بجلی پیدا کرنے کی وجہ سے ہر سال 12ارب ڈالر سے زائد کا تیل درآمد کرنا پڑتا ہے۔ لاہور چیمبر کے نائب صدر کاشف انور نے کہا کہ کالاباغ ڈیم پر تنازعات کی وجہ سے ملک کو بھاری نقصان پہنچ رہا ہے اور عوام بُری طرح متاثر ہورہے ہیں۔ انہوں نے کالاباغ ڈیم کی تعمیر کے لیے موثر مہم چلانے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔

اس موقع پر کرنل عبدالرزاق بگتی نے لاہور چیمبر کے صدر انجینئر سہیل لاشاری کو سندھی ٹوپی اور اجرک پیش کی۔

مزید : کامرس