روس پاکستان باہمی تجارت کے فروغ کیلئے تجارتی وفود کے تبادلہ پر اتفاق

روس پاکستان باہمی تجارت کے فروغ کیلئے تجارتی وفود کے تبادلہ پر اتفاق

فیصل آباد( بیورورپورٹ) روس اور پاکستان کے درمیان باہمی تجارت کے فروغ کیلئے تجارتی وفود کے تبادلہ پر اتفاق کر لیا گیا ہے جبکہ سیاحت کے شعبہ پر بھی توجہ مرکوز کرنے کی تجویزسنجیدگی سے زیر غور ہے تاکہ دونوں ممالک ایک دوسرے کی سہولیات سے استفادہ کر سکیں۔ایوان صنعت و تجارت فیصل آباد کے دورہ اور چیمبر کے عہدیداران و ممبران سے خطاب کے دوران ہیڈ آف رشین فیڈریشن ٹریڈ یوری کوزلو نے کہاکہ روس پاکستان کے ساتھ معاشی اور تکنیکی شعبوںمیں تعاون کا خواہاں ہے جبکہ باہمی تجارت کے فروغ کے ساتھ ساتھ توانائی کے بحران کے حل کیلئے سرمایہ کاری بھی کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ روس پاکستان کے ساتھ باہمی تجارت کو فروغ دینا چاہتا ہے جبکہ پاکستان کے توانائی بحران کے خاتمہ کیلئے بھی روسی کمپنیاں سرمایہ کاری کر رہی ہیں اسی طرح پاکستان کے ساتھ ٹیکنیکل تعاون بھی بڑھایا جائیگا۔ انہوں نے کہا کہ باہمی تجارت کے فروغ کیلئے تجارتی وفود کا تبادلہ اور سیاحت کے شعبے پر بھی توجہ دینا ہوگی۔اس موقع پر صدر فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری انجینئر سہیل بن رشید نے کہا کہ روس سٹیل، توانائی اور ریل کے انجنوں میں مہارت کا حامل ہے انہوں نے روسی کمپنیوں کو پاکستان میں توانائی کے بد ترین بحران کے خاتمہ کیلئے سرمایہ کاری کی تجویز دی جبکہ تکنیکی معاونت خصوصاً سٹیل کے شعبہ میں روسی معاونت بھی قابل ستائش ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے تاجروں کے قریبی روابط خصوصاً تسلسل کے ساتھ تجارتی وفود اور معلومات کے تبادلے سے تجارتی حجم کو بڑھایا جا سکتا ہے۔

 انہوں نے روسی کمپنیوں کی طرف سے توانائی کے شعبہ میں حالیہ سرمایہ کاری کو سراہا اور کہا کہ اس ضمن میںمزید غیر ملکی سرمایہ کاری وقت کی اہم ضرورت ہے کیونکہ توانائی میں سرمایہ کاری بڑی منافع بخش ہے۔

مزید : کامرس