امریکہ نے حافظ سعید کے سر کی قیمت بھی مقرر کر دی

امریکہ نے حافظ سعید کے سر کی قیمت بھی مقرر کر دی
امریکہ نے حافظ سعید کے سر کی قیمت بھی مقرر کر دی

  

واشنگٹن (ویب ڈیسک)امریکہ نے مطلوب دہشت گردوں کی فہرست میں جماعت الدعوة کے امیر حافظ سعید کے سر کی قیمت 10ملین ڈالر مقرر کر رکھی ہے۔عرب میڈیا نے ان دہشت گردو ںکے کی فہرست پر روشنی ڈالتے ہوئے رپورٹ جاری کی ہے جس میں امریکہ کو مطلوب دہشت گردوں کے سروں کی قیمت پر روشنی ڈالی گئی ہے جس میں جماعت الد عوة کے امیر حافظ سعید کے سر کی قیمت 10ملین ڈالر رکھی گئی ہے ۔

امریکہ کو مطلوب عالمی دہشت گردوں کے زندہ یا مردہ گرفتاری میں معاونت کرنے والوں کے لیے بھاری معاوضے مقرر کر دئیے گئے رپورٹ کے مطابق اشتہاری عالمی دہشت گردوں میں پہلے نمبر پر القاعدہ کے سربراہ ڈاکٹر ایمن الظواہری کا نام آتا ہے جس کے سرکی قیمت 25 ملین ڈالر مقرر کی گئی ہے۔شام اور عراق میں سرگرم دولت اسلامی”داعش“ کے سربراہ اور خود ساختہ خلیفہ ابو بکر البغدادی کی قیمت 10 ملین ڈالر، افغان طالبان کے امیر ملاعمر، ایران میں مقیم القاعدہ رہنما یاسین السوری، پاکستان میں جماع الدعوة کے سربراہ حافظ سعید کی گرفتاری پربھی 10،10ملین ڈالر کی رقم مقرر کی گئی ہے۔

عراق میں الزرقاوی گروپ میں شامل فاضلی، صومالیہ میں سرگرم ”حرکت شباب“ کے سربراہ احمدمحمدعبدی اور نائیجیریا کے اسلامی شدت پسند گروپ بوکو حرام کے امیر ابوبکر شیکاﺅ کے سروں کی قیمت سات، سات ملین ڈالر رکھی گئی ہے۔القاعدہ کے ایک دوسرے کمانڈر عبداللہ احمد عبداللہ اور سیف العدل کے سروں کی قیمت پانچ ملین ڈالر مقرر کی گئی ہے۔

 مراکش میں القاعدہ لیڈر عمر ولد حماحہ، مغربی افریقا میں حرکت جہاد کے ترجمان عبداللہ الباری کے سرکی قیمت تین، تین ملین ڈالر مقرر کی گئی ہے جبکہ لشکرطیبہ کے رہنما حافظ عبدالرحمان مکی کی گرفتاری پر دو ملین ڈالر کی رقم رکھی گئی ہے۔

 علاوہ ازیں آدم یحیٰی غدن، فلیپائن میں سرگرم ابو سیاف گروپ کے سربراہ راڈولان ساھیرون اور اسی تنظیم کے اسلحہ ساز عبدالباسط عثمان کی گرفتاری پر ایک ایک ملین ڈالر کی رقم رکھی گئی ہے جبکہ ابوسیاف کے ایک دوسرے کمانڈر خیر مندوس کی گرفتاری پر پانچ لاکھ ڈالر کی رقم مقرر کی گئی ہے۔

مزید : بین الاقوامی