پی سی ڈی ایم اے کا ڈٹرجنٹ‘ صابن انڈسٹری کے بنیادی خام مال کی امپورٹ ٹریڈ پرائس میں کمی کا خیرمقدم

پی سی ڈی ایم اے کا ڈٹرجنٹ‘ صابن انڈسٹری کے بنیادی خام مال کی امپورٹ ٹریڈ ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


کراچی (اے پی پی) پاکستان کیمیکلز اینڈ ڈائر مرچنٹس ایسوسی ایشن( پی سی ڈی ایم اے) کے چیئرمین ناصر فتح ککڈا نے پاکستان کسٹمز کے ڈائریکٹوریٹ ویلیوایشن کی جانب سے ڈٹرجنٹ اور صابن ساز صنعتوں کے بنیادی خام مال سلفونک ایسڈ کی درآمدات پر امپورٹ ٹریڈ پرائس میں کمی کا خیرمقدم کرتے ہوئے ڈی جی ویلیوایشن خواجہ تنویر احمد اور طفیل کیمیکلز کے زبیر طفیل، پرویز طفیل کی خدمات کو سراہا ہے اور اس اقدام کو صابن و ڈٹرجنٹ انڈسٹری کی کاروباری لاگت میں کمی کے حوالے سے خوش آئند قرار دیاہے۔ بدھ کو جاری کردہ بیان میں انہوں نے کہاکہ سلفونک ایسڈ کی درآمدت پر امپورٹ ٹریڈ پرائس1250 ڈالر فی ٹن مقرر تھی ۔ محکمہ کسٹمز نے عالمی مارکیٹ میں دستیاب قیمتوں کو مدنظر رکھتے ہوئے90ڈالر کی کمی کردی جس سے سلفونک ایسڈ کی امپورٹ ٹریڈ پرائس1160 ڈالر فی ٹن ہو گئی ۔ اس اقدام سے یقینی طور پر صابن و ڈٹرجنٹ انڈسٹری کی پیداواری سرگرمیوں پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے خصوصاً مقامی مارکیٹوں میں صابن و ڈٹرجنٹ کی قیمتوں میں کمی واقع ہو گی جس کا فائدہ عوام کو پہنچے گا۔ ناصر فتح ککڈا نے مزید کہاکہ مقامی صنعتوں میں سلفونک ایسڈ کی سالانہ طلب ایک لاکھ ٹن ہے جس میں سے تقریبا 70 فیصد حصہ سلفونک ایسڈ کے مقامی پروڈیوسرز پورا کر تے ہیں ۔
جبکہ30فیصد حصہ درآمد کیا جاتا ہے۔انہوں نے کہاکہ صابن و ڈٹرجنٹ انڈسٹری کی پیداواری طلب کو پورا کرنے کے لیے کوریا،بھارت اور چین سے سالانہ 20ہزار ٹن سلفیونک ایسڈ درآمد کیاجاتا ہے تاہم امپورٹ ٹریڈ پرائس میں کمی سے درآمدات میں اضافے کی توقع ہے جس سے حکومت کے ریونیو میں خاطر خواہ اضافہ ہوگا۔

مزید :

کامرس -