امریکہ نے جماعت الدعوہ کے سٹوڈنٹ ونگ المحمدیہ اسٹوڈنٹس کو دہشتگرد تنظیم قرار دے کر پابندی عائد کردی

امریکہ نے جماعت الدعوہ کے سٹوڈنٹ ونگ المحمدیہ اسٹوڈنٹس کو دہشتگرد تنظیم ...
امریکہ نے جماعت الدعوہ کے سٹوڈنٹ ونگ المحمدیہ اسٹوڈنٹس کو دہشتگرد تنظیم قرار دے کر پابندی عائد کردی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

واشنگٹن(ڈیلی پاکستان آن لائن)امریکہ نے جماعت الدعوہ کے سٹوڈنٹ ونگ المحمدیہ اسٹوڈنٹس کو دہشتگرد تنظیم قرار دیتے ہوئے پابندی عائد کردی ہے۔
خبر رساں ادارے ”رائٹرز“کے مطابق امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ المحمدیہ اسٹوڈنٹس سے کسی بھی قسم کی لین دین پرپابندی عائد کردی ہے،لشکرطیبہ کا اسٹوڈنٹ ونگ المحمدیہ اسٹوڈنٹس دہشتگرد تنظیم ہے اس سے کسی بھی قسم کا لین دین نہ کیا جائے۔
امریکی ذرائع کا کہنا ہے کہ لشکر طیبہ بھارت مخالف عسکریت پسند تنظیم ہے جس کا تعلق پاکستان کی خفیہ ایجنسی سے جوڑا جاتا ہے،اس تنظیم پر الزام ہے کہ اس نے 2008ءمیں بھارتی شہر ممبئی پر حملے کیے جس میں166افراد مارے گئے جن میں 6امریکی بھی تھے۔
امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ المحمدیہ سٹوڈنٹس لشکر طیبہ کی سہولت کار تنظیم ہے جو اس کیلئے چند جمع کرکے مالی امداد کا کام کرتی ہے اس لیے لوگ اس رابطہ نہ رکھیں اور لین دین چھوڑ دیں۔
یاد رہے کہ پاکستانی حکومت نے بھی2002ءمیں لشکر طیبہ کو دہشتگرد تنظیم قرار دے کر پابندی عائد کررکھی ہے،لشکر طیبہ سے تعلق رکھنے والے ارکان نے عسکری کارروائیوں کو ترک کرکے فلاحی کاموں کی تنظیم جماعت الدعوہ بنا رکھی ہے جس کے سربراہ حافظ محمد سعید ہیں۔

افغان پارلیمنٹ کے رکن اور ان کا بیٹا بم حملے میں شدید زخمی ،ہسپتال منتقل
امریکی محکمہ خارجہ نے الزام عائد کیا ہے کہ لشکر طیبہ کا یہ سٹونٹ ونگ پاکستان میں موجود قیادت کے زیر سرپرستی کام کررہا ہے جو تنظیم کا نام تبدیل کرکے کام کررہے ہیں،یہ تنظیم دہشتگردوں کی بھرتی میں ملوث ہے۔
امریکی محکمہ خزانہ کے ایک اہلکار کا کہنا ہے کہ امریکہ میں محمد سرور اور شاہد محمود اس تنظیم کیلئے چندہ جمع کرتے تھے جن کے اکاﺅ نٹس کو بند کردیا گیا ہے۔